The news is by your side.

Advertisement

یوکرینی صدر نے روس کیخلاف دنیا سے بڑا مطالبہ کردیا

یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے روس پر زیادہ سے زیادہ پابندیاں لگانے کا مطالبہ کیا ہے، جس میں تمام روسی بینکوں پر پابندی، روسی تیل پر پابندی اور روس کے ساتھ تمام تجارت بند کرنا شامل ہے۔

ورلڈ اکنامک فورم کے سالانہ اجلاس2022 سے ایک ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج ہم نے87 افراد کو کھو دیا اور یوکرین کا مستقبل ان87 افراد کے بغیر ہوگا۔

زیلنسکی نے کہا کہ روس پر زیادہ سے زیادہ پابندیاں لگنی چاہئیں، جس میں روس کے تیل پر پابندی سمیت تمام روسی بینکوں پر بھی پابندیاں عائد کی جائیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ روس کے ساتھ کوئی تجارت نہیں ہونی چاہیے، صدر نے مزید کہا کہ اقدار کو اہمیت دینی چاہیے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ یوکرین کاروباری مواقع کے لیے کھلا ہے اور جنگ کے بعد تعمیر نو کا کاروبار بہت زیادہ امکانات فراہم کرے گا۔

یوکرین کے صدر نے کہا کہ ہمیں دنیا کی حمایت اور یہ جنگ جیتنے کی ضرورت ہے، یہ واقعی وہ لمحہ ہے جب یہ فیصلہ کیا جانا ہے کہ کیا روس دنیا پر حکمرانی کرے گا؟

انہوں نے مزید کہا کہ پرامن شہروں کے بجائے صرف کالے کھنڈرات ہیں، عام تجارت کے بجائے بارودی سرنگوں سے بھرے سمندر اور بند بندرگاہیں ہیں۔ سیاحت کے بجائے یہاں ہزاروں روسی فوجی بموں کے ساتھ کروز میزائل لے کر کھڑے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں