The news is by your side.

Advertisement

کارٹون دیکھنے کے شوق نے نوجوان کو لکھ پتی بنادیا

اپنے بچپن میں ٹی وی پر کارٹون تو سب ہی دیکھتے ہیں لیکن یہ کارٹون اتنے کارآمد اور کمائی کا ذریعہ بھی بن سکتے ہیں، اس کا خیال کبھی نہیں آیا۔

کیا آپ نے کبھی سوچا ہے کہ آپ کو اپنے من پسند کارٹون دیکھنے پر پیسے بھی مل سکتے ہیں؟ حیرانی کی بات تو ضرور ہے مگر سچ میں ایسا ہوا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق برطانیہ سے تعلق رکھنے والے 26 سالہ الیگزینڈر ٹاؤنلی کو سالانہ 5 ہزار پاؤنڈ، پاکستانی روپے کے مطابق11 لاکھ روپے ملتے ہیں۔

وہ بھی مشہور اینیمیٹڈ سیریز "دی سمپسنز” دیکھنے کے لئے، صرف یہی نہیں بلکہ اسے ساتھ میں فری ڈونٹس بھی فراہم کیے جاتے ہیں۔

غیرملکی میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ الیگزینڈر کو سوشل میڈیا پر ان کے بھائی نے ایک پوسٹ میں ٹیگ کیا تھا جس میں کمپنی کو ایسے شخص کی تلاش تھی جو”دی سمپسنز” کی ہر قسط کو دیکھ کر اس پر تجزیہ کر سکے۔

الیگزینڈر جو پہلے ہی دی سمپسنز کا بہت بڑا فین تھا اس نوکری کیلئے درخواست جمع کروادی —فوٹو: جیم پریس

الیگزینڈر جو پہلے ہی دی سمپسنز کا بہت بڑا فین تھا اس نے فوری اس نوکری کیلئے درخواست جمع کروادی، اور وہ یہ جان کر حیران رہ گیا کہ اسے یہ نوکری مل بھی گئی ہے۔

غیر ملکی میڈیا سے بات کرتے ہوئے الیگزینڈر نے بتایا کہ میں سمپسنز کا بہت بڑا فین ہوں اور اسے پیسے کے لیے دیکھنا ایک ایسی چیز ہے جس کا میں نے ہمیشہ خواب دیکھا ہے۔

تاہم الیگزینڈر نے بتایا کہ یہ کام اتنا بھی آسان نہیں ہے، مجھے سمپسنز دیکھتے وقت ایک نوٹ پیڈ اور قلم کے ساتھ بیٹھنا پڑتا ہے اور ہر چھوٹی چھوٹی تفصیل لکھنی پڑتی ہے جبکہ میرے ایسے ہفتے بھی گزرے ہیں جہاں میں نے ایک دن میں 30 اقساط دیکھی ہیں۔

واضح رہے کہ امریکی اینیمیٹڈ سیریز ‘دی سمپسنز’ اپنی پیش گوئیوں کے حوالے سے دنیا بھر میں کافی مقبول ہے جس میں مستقبل میں ہونے والے کئی واقعات کو پہلے سے بتایا گیا ہے اور وہ بعد میں حقیقت میں ورنما بھی ہوئے ہیں۔ یاد رہے کہ 9/11 اور کورونا وبا کی پیش گوئی بھی سمپسن میں پہلے کی جاچکی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں