The news is by your side.

Advertisement

کھانا پکانے کی ویڈیوز دیکھنے کا نقصان جان کر آپ حیران رہ جائیں گے

سماجی رابطے کی مختلف سائٹس پر مزیدار کھانا پکانے کی اشتہا انگیز ویڈیوز دیکھنا یا کوکنگ شوز سے لطف اندوز ہونا ایک عام بات ہے اور ہم میں سے ہر شخص شوق سے ایسی ویڈیوز دیکھتا ہے، تاہم اب ایسی ویڈیوز دیکھنے کا نقصان سامنے آگیا۔

حال ہی میں انگلینڈ میں کی جانے والی ایک تحقیق سے علم ہوا کہ کھانا پکانے کی ویڈیوز دیکھنے سے اشتہا میں اضافہ ہوتا ہے اور ہم زیادہ کھاتے ہیں جس کا نتیجہ موٹاپے کی صورت میں نکلتا ہے۔

ماہرین کے مطابق اس سے فرق نہیں پڑتا کہ ان ویڈیوز سے کچھ سیکھ کر ہم کچھ پکاتے ہیں یا نہیں، لیکن مجموعی طور پر ہم زیادہ کھانے کی طرف راغب ہوتے ہیں۔

اس تحقیق کے لیے مختلف افراد کے 3 گروپ بنائے گئے، ایک گروپ کو چیز ریپ (ڈش) بنانے کی ویڈیو دیکھنے کے لیے کہا گیا، دوسرے گروپ کو وہی ڈش بنانے کے لیے کہا گیا، تیسرے گروپ کو ان کی روزمرہ کی روٹین کے بعد وہی ڈش کھانے کے لیے کہا گیا۔

تینوں گروپس نے جب یکساں ڈش کھائی تو ماہرین نے دیکھا کہ ویڈیو دیکھنے والے افراد نے دیگر افراد کی نسبت 14 گنا زیادہ کھایا، بنانے والوں میں یہ شرح 11 فیصد رہی جبکہ سب سے کم انہوں نے کھایا جو روزمرہ کے کام کے بعد معمول کے مطابق کھانے کے لیے بیٹھے۔

ماہرین نے یہ نتیجہ اخذ کیا کہ موٹاپے میں کمی کے خواہشمند افراد کھانے سے قبل اگر کوئی (کھانے سے) غیر متعلق اور توجہ بھٹکانے والا کام کریں تو ان کی اشتہا میں کمی ہوسکتی ہے۔

ان کے مطابق کھانا بناتے ہوئے کئی حسیں کام کرتی ہیں جیسے سونگھنے، چکھنے، اور دیکھنے کی حس، جو جسم کو کھانے کے لیے تیار کردیتی ہیں، یہی وجہ ہے کہ کھانا پکانے والے افراد بھی زیادہ کھاتے ہیں۔

ماہرین نے یہ مشورہ بھی دیا کہ کھانا پکانے کی ویڈیوز دیکھنے کے شوقین افراد اگر جنک فوڈ کے بجائے صحت مند کھانا بنانے کی ویڈیوز دیکھیں، جیسے کم تیل والے کھانے اور سبزیاں پکانے کی ویڈیوز، تو یہ بھی ان کی صحت کے لیے فائدہ مند ثابت ہوسکتی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں