The news is by your side.

Advertisement

پاکستان میں رواں برس پانی کی قلت کا خدشہ

اسلام آباد: پاکستانی محکمہ موسمیات نے خبردار کیا ہے کہ رواں برس کے اگلے 3 ماہ میں موسم سرما کی معمول کی بارشوں میں کمی کا خدشہ ہے جس کے باعث رواں برس پاکستان میں پانی کی قلت واقع ہوسکتی ہے۔

محکمہ موسمیات نے اس ضمن میں تمام متعلقہ اداروں کو ہدایت جاری کی ہے کہ وہ پانی کی دستیابی و فراہمی کے نظام میں خاص احتیاط کریں تاکہ ممکنہ قلت آب سے بچا جا سکے۔

اس بارے میں محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر غلام رسول کا کہنا تھا کہ ایسا نہیں کہ اکتوبر تا دسمبر ہونے والی موسم سرما کی بارشیں رواں برس نہیں ہوں گی، تاہم وہ اتنی نہیں ہوسکیں گی کہ وہ ملک کے اہم ذرائع آب کو بھر سکیں۔

انہوں نے بتایا کہ پاکستان کے شمالی علاقوں میں 22 اور 23 ستمبر کو بارشوں کا امکان ہے تاہم ان کے علاوہ ملک کا دیگر حصہ خشک اور گرم رہے گا۔

ڈاکٹر غلام رسول نے یہ بھی بتایا کہ صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی میں تاحال ہیٹ ویو کی صورتحال ہے جبکہ صوبہ بلوچستان کے کئی علاقوں میں درجہ حرارت تاحال 40 ڈگری سینٹی گریڈ ہے۔

مزید پڑھیں: کراچی میں اچانک اتنی بارشیں کیوں ہونے لگیں؟

ان کے مطابق ستمبر کے آغاز سے سندھ اور پنجاب کے کچھ علاقوں میں معمولی بارشیں ہوں گی جبکہ آزاد جموں و کشمیر اور بلوچستان کے علاقوں میں معمول سے بھی کم بارشیں ہوں گی۔

انہوں نے مون سون کے آخری سائیکل کے بارے میں بتایا کہ جب یہ پاکستان میں داخل ہوا اس وقت بہت کمزور ہوچکا تھا، بصورت دیگر یہ پاکستان میں بھی اسی نوعیت کی تباہی مچا سکتا تھا جیسی تباہی اس نے بھارت، بنگلہ دیش اور نیپال میں مچائی۔

مزید پڑھیں: بارش سے 10 کروڑ روپے کا نقصان

ڈاکٹر غلام رسول کا کہنا تھا کہ رواں برس پاکستان میں موسم کے پیٹرن میں نہایت غیر معمولی رد و بدل دیکھنے میں آیا ہے۔ رواں برس مون سون کا آغاز جون سے ہی ہوگیا اور موسلا دھار بارشیں شروع ہوگئیں جبکہ ہر سال بارشوں کا آغاز جولائی سے ہوتا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں