The news is by your side.

Advertisement

کسی علاقے کی بات نہیں،کرمنل کے پیچھے ہر جگہ جائیں گے،ڈی جی رینجرز

کراچی : لاڑکانہ میں رینجرز کی گاڑی پر حملے کے بعد ڈی جی رینجرز نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے دوٹوک انداز میں موقف بیان کیا کہ رینجرز جرائم پیشہ افراد کے پیچھے ہر علاقے تک جائے گی اور اس میں کوئی ابہام نہ رہے۔

ڈی جی رینجرز بلال اکبر نے لاڑکانہ میں رینجرز کی گاڑی پر حملہ کرکے 1 رینجرز اہلکار کو شہید اور 4 اہلکاروں کو زخمی کرنے کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ لاڑکانہ میں دو دھماکے کیے گئے ہیں،بم سڑک کے کنارے کھڑی دو سائیکلوں میں نصب تھے،دھماکے میں ممکنہ طور شدت پسند تنظمیں ملوث ہوسکتی ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں انہون نے کہا کہ دھماکے میں کسی سیاسی جماعت کے ملوث ہونے سے متعلق کچھ کہنا قبل از وقت ہے تا ہم جو بھی ان واقعات میں ملوث ہوا اسے کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا،رینجرز کرمنل کے پیچھا کرتے ہوئے ہر علاقے میں جائے گی۔

واقعہ کی مکمل تفصیل جانیے : لاڑکانہ میں کریکردھماکہ،1اہلکار جاں بحق چار زخمی 

دھماکے کی وجوہات کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں ڈی جی رینجرز نے جواب دیا کہ لاڑکانہ میں رینجرز گاڑی پر دھماکہ پاک چائنا اقتصادی راہداری کو متاثر کرنے کی کوشش ہو سکتی ہے۔

اس موقع پر رینجرز کو اختیارات ملنے کے حوالے سے ڈی جی رینجرز نے واضح کیا کہ رینجرز کو صوبائی اور وفاقی حکومت کی حمایت حاصل ہے،اس حوالے سے قانون بھی کلیئر ہے،ہم بھی کلیئر ہیں اور ادارے بھی کلیئر ہیں کہیں کوئی ابہام نہیں ہے۔

دوسری جانب پولیس نے واقعہ کے بعد علاقے کو گھیرے میں لے کر کارروائی کرتے ہوئے 20 مشتبہ کو لاڑکانہ اور قمبر شہداد کوٹ سے گرفتار کر لیا ہے،گرفتار ملزمان سے نامعلوم مقام پر تفتیش کی جا رہی ہے،خدشہ ہے کہ رینجرز گاڑی پر حملے میں کالعدم علیحدگی پسند تنظمیں ملوث ہوں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں