The news is by your side.

Advertisement

"کسی کے غلام نہیں، ملک کو امریکا کی غلامی سے آزاد کرائیں گے”

ڈیرہ اسماعیل خان: جمعیت علماء اسلام (ف) اور پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ کسی کے غلام نہیں، پاکستان کو امریکی غلامی سے آزاد کرائیں گے۔

ڈی آئی خان میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے پی ڈی ایم سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ہم نے پسماندہ علاقوں کو ترقی دینا اپنے منشور کا حصہ بنایا، ووٹ خریدنا قوم کا عیب ہوتا ہے، مقابلہ بلے اور کتاب کے درمیان ہے، 3 سال بلے کی حکومت دیکھی، آج غریب آدمی آٹا خریدنے کے قابل نہیں، حکومت نے معیشت کا بیڑا غرق کر دیا۔

انہوں نے کہا کہ آج کشمیر کی یکجہتی کا دن ہے اور وزیراعظم چین گئے ہیں، چین کی قیادت نے ویڈیو لنک سے بات چیت کی اور ملاقات نہیں کی، خود کو وزیراعظم کہنے والے سے چین میں قیادت ملاقات نہیں کرتی، چین میں ہو کر بھی قیادت ویڈیو لنک پر بات کرتی ہے، عمران خان قوم کے لیے شرمندگی کا باعث ہیں۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ حکومت نے اسٹیٹ بینک کا سودا کر دیا ہے، میں ان قوتوں کو بتانا چاہتا ہوں کہ آئندہ احتیاط کریں، ہم کسی کےغلام نہیں ہیں، ہم نے اس ملک کو امریکا کی غلامی سے آزاد کرانا ہے۔

جے یو آئی (ف) کے سربراہ نے کہا کہ 2019 کے بعد اسٹیٹ بینک نے حکومت کو کوئی قرضہ نہیں دیا، دھاندلی کر کے ملک پر نااہل اور نالائقوں کو قوم پر مسلط کیا گیا، ہماری امریکا کی غلامی کرنے والوں کے خلاف جنگ ہے۔

انہوں نے کہا کہ سازش کے تحت صوبے میں 2 مرحلوں میں الیکشن کرائے، عوام نے ان کی یہ بھی سازش ناکام بنا دی، انہوں نے بھیک مانگ مانگ کر قوم کو بے توقیر کر دیا ہے، عمران خان کے بلے نے ہمیں بے بس کر دیا، اب قوم جان چھڑانے کے لیے دعاگو ہے، لوگ ملک کی اس تباہی میں عمران خان کا ساتھ نہ دیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں