The news is by your side.

Advertisement

باراتیوں کے مبینہ تشدد سے پاپڑ فروش کی موت پر انتظامیہ کا ایکشن ، نجی شادی ہال سیل

پتوکی: اسسٹنٹ کمشنر نے باراتیوں کے مبینہ تشدد سے پاپڑ فروش کے جاں بحق ہونے کا واقعے پر نجی شادی ہال کو سیل کردیا اور کہا شادی ہال مالکان کے خلاف مقدمہ بھی درج کیا جا رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب کی تحصیل قصور کے شہر پتوکی میں باراتیوں کے مبینہ تشدد سے پاپڑ فروش کے جاں بحق ہونے کے واقعے پر انتظامیہ ایکشن میں آگئی۔

اسسٹنٹ کمشنر نے نجی شادی ہال کو سیل کردیا اور متاثرہ فیملی کوانصاف کی فراہمی کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا شادی ہال مالکان کے خلاف مقدمہ بھی درج کیا جا رہا ہے۔

دوسری جانب شادی ہال میں تشددسےجاں بحق محنت کش کی تدفین کردی گئی، جاں بحق اشرف کی تدفین آبائی گاؤں جاگوالہ چک میں کی گئی تاہم اشرف عرف سلطان کی نمازجنازہ میں کسی آفسرنےشرکت نہیں کی

ایس پی انویسٹی گیشن نے بتایا کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ میں زیادہ گہرے زخموں کے نشان نہیں تاہم موت کی وجہ کا تعین کرنے کیلئے نمونے لیبارٹری بھجوادئیے ہیں۔

کامران اصغر کا کہنا تھا کہ پولیس نے12سےزائدافرادکوگرفتارکیاہے اور گرفتارافرادسے مزیدتفتیش جاری ہے، ذمہ داران کاتعین کرکےقانون کےکٹہرےمیں لایا جائے گا۔

یاد رہے پنجاب کےشہرپتوکی میں شادی ہال میں پاپڑ بیچنے والے کوباراتیوں نے تشدد کرکے مار ڈال تھا جبکہ پاپڑوالے کی لاش پڑی رہی اورباراتی کھانا کھاتے رہے۔

باراتیوں کا الزام تھا کہ پاپڑ والا جیب کترا تھا تاہم پولیس نے جائے وقوع پہنچ کرشادی ہال کےمنیجرکوگرفتار کیا اور مقتول کےبھائی کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا گیا۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کے نوٹس لینے پر رات گئے بارات میں شامل تیرہ افراد کو بھی گرفتار کرلیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں