The news is by your side.

Advertisement

’14 سال بعد بھی فلم کا معاوضہ نہیں ملا’ معروف اداکار نے بالی ووڈ کا پول کھول دیا

ممبئی : بھارتی فلموں میں معاون کردار نبھانے والے اداکاروں کے ساتھ روا رکھے جانے والے سلوک سے متعلق اداکار اسنیہال دابی نے بڑا انکشاف کردیا۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق 2007 میں ریلیز ہونے والی بالی ووڈ فلم ‘ویلکم’ میں اداکاری کے جوہر دکھانے والے معروف اداکار نے فلم انڈسٹری کا پول کھول دیا۔

بھارتی فلموں میں معاون اداکار کا کردار نبھانے والے مشہور اداکار اسنیہال دابی نے دعویٰ کیا ہے کہ ویلکم فلم میں اداکاری کا معاوضہ 14 سال گزرنے کے باوجود نہیں ملا۔

فلم ویلکم بھارت کی کامیاب ترین فلموں میں سے ایک ہے جو اربوں روپے کا بزنس کرنے میں کامیاب ہوئی تھی، اس کے باوجود ساجد نادیاد والا نے اداکار اسنیہال کو معاوضے کی ادائیگی نہیں کی۔

یہ انکشاف اداکار اسنیہال دابی نے ایک انٹرویو کے دوران کیا، انہوں نے بتایا کہ فیروز نادیاد والا انھیں تسلی دیتے رہے کہ میں آپ کے پیسے دے دوں گا اور بار بار یہی ہوتا رہا لیکن میرا معاوضہ نہیں ملا۔

انہوں نے کہا کہ اب اگر فیروز نادیاد والا انہیں 10 کروڑ روپے کی بھی پیشکش کریں تب بھی وہ ان کے ساتھ فلم نہیں کریں گے کیوں کہ فیروز نادیاد والا جھوٹے وعدے کرتے ہیں۔

خیال رہے کہ اس فلم میں اکشے کمار نے مرکزی کردار ادا کیا تھا، جبکہ بڑی کاسٹ کی حامل اس فلم میں فیروز خان، نانا پاٹیکر، انیل کپور، کترینہ کیف، ملیکا شراوت اور پاریش راول نے کام کیا تھا، اس فلم میں اداکار اسنیہال دابی نے مجنو بھائی (انیل کپور) کے دست راست کا کردار نبھایا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں