The news is by your side.

شعیب اختر نے سچن ٹنڈولکر کو آؤٹ کرنے کا دلچسپ قصہ سنا دیا

 نئی دہلی: جب بھی بھارت اور  پاکستان میچوں کے قصوں کی بات آتی ہے تو غیر ملکی کھلاڑی بھی اس کو بہت دلچسپی سے سننا چاہتے ہیں ۔

ٹیلی گراف اسپورٹس پر مائیکل وان کے ساتھ ایک انٹرویو کے دوران شعیب اختر نے سچن ٹنڈولکر کو آؤٹ کرنے کا دلچسپ قصہ سنایا،  1999 ایشین ٹیسٹ چیمپئن شپ میں ایڈن گارڈنز میں میچ کے دوران شعیب اختر نے بھارت کے چار وکٹ لیے تھے۔

اس میچ میں پاکستان کے فاسٹ بولر شعیب اختر اور بھارت کے لیجنڈ بلے باز سچن ٹیندولکر کے درمیان سخت مقابلہ ہوا تھا،  میچ میں شعیب اختر نے سچن ٹیندولکر کو پہلی ہی گیند پر آوٹ کردیا تھا،  اس کا قصہ انہوں نے مائیکل وان کے ساتھ شیئر کیا ۔

شعیب اختر نے کہا کہ سچن دنیا کے ایک سب سے اچھے ، سب سے عظیم شخص ہونے کے ناطے میں ان کے پاس گیا تھا ۔ انہیں دیکھا اور کہا کہ آپ کے پاس میرے خلاف کوئی موقع نہیں ہے، میں نے اس میچ میں سچن کو پہلی ہی گیند پر آوٹ کردیا تھا  اور یہ کرکٹ کی تاریخ میں ایسا پہلی مرتبہ ہوا تھا ۔

شعیب اختر نے مزید کہا کہ میری وجہ سے وہ پہلی گیند پر آوٹ ہوگئے تھے ،  میری وجہ سے پہلی مرتبہ 70 ہزار سے 80 ہزار لوگ اسٹیڈیم سے باہر جانا چاہتے تھے، پہلی مرتبہ میچ میں تاخیر ہوئی تھی ، میچ تقریبا دو گھنٹے بعد شروع ہوا تھا ۔ تاریخ میں پہلی مرتبہ تقریبا ایک لاکھ لوگ میچ دیکھنے آئے تھے اور  ٹندولکر کے آؤٹ ہونے کے بعد وہاں پر کوئی نہیں تھا۔

واضح رہے کہ  شعیب اختر کیلئے یہ وکٹ انتہائی خاص تھی، کیونکہ انہوں نے اس وقت کے بہترین بیٹر کو صفر پر آوٹ کیا تھا ۔ انہوں نے اس میچ میں سچن کے علاوہ وی وی ایس لکشمن، راہل دراوڑ اور وینکٹیش پرساد کا بھی وکٹ بھی لیا تھا  جبکہ بھارت  یہ میچ 46 رنز سے ہار گیا تھا ۔

Comments

یہ بھی پڑھیں