The news is by your side.

Advertisement

خلیج عمان میں تیل بردار جہاز پر حملہ کس نے کیا؟ فوٹیج سامنے آگئی

واشنگٹن: امریکی فوج نے تیل بردار بحری جہازوں کے قریب ایرانی کشتی کی فوٹیج جاری کردی، کشتی پر سوار افراد نے جہاز کے قریب نصب بارودی سرنگ کا معائنہ کیا اور اسے اتار دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکی فوج نے ایک تصویری ویڈیو جاری کی ہے جس میں ایرانی پاسداران انقلاب کی ایک کشتی کو بحر اومان میں جاپانی تیل بردار جہاز کے قریب ایک بارودی سرنگ کو ہٹاٹے دیکھا جا سکتا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یہ بارودی سرنگ اس جہاز کو تباہ کرنے کے لیے نصب کی گئی تھی مگر وہ پھٹ نہیں سکی اور اسے کشتی کے ذریعے ہٹانے کی کوشش کی گئی ہے۔ اس فوٹیج سے ایران کے ان دعوؤں کی قلعی کھل گئی ہے جن میں کہا گیا تھا کہ بحر اومان میں تیل بردار جہازوں پر حملوں میں ایران ملوث نہیں۔

امریکی سینٹرل کمان کے ترجمان بیل اوربان کا کہنا ہے کہ مقامی وقت کے مطابق شام 4 بج کر 10 منٹ پر پاسداران انقلاب کی ایک پٹرولنگ کشتی کوکوکا بحری جہاز کے قریب گئی۔ کشتی پر سوار افراد نے جہاز کے قریب نصب بارودی سرنگ کا معائنہ کیا اور اسے اتار دیا گیا۔

قبل ازیں امریکی عہدیداروں نے دعویٰ کیا تھا کہ امریکا کے پاس تیل بردار جہازوں پر حملوں میں ایران کے ملوث ہونے کا ریکارڈ موجود ہے جس میں ایرانی فوج کو بحر اومان میں حملوں کا نشانہ بنائے گئے جہازوں کے قریب بارودی مواد کو اتارتے دیکھا جا سکتا ہے۔

امریکا نے خلیج عمان میں‌ ہونے والے حملوں‌ کا ذمہ دار ایران کو قرار دے دیا

امریکی عہدیدار نے نام ظاہر نہ کرنےکی شرط پر کو بتایا کہ اس نے خود وہ فوٹیج دیکھی ہے جس میں پاسداران انقلاب کے اہلکاروں کو تیل بردار جہاز کے قریب نہ پھٹنے والی بارودی سرنگ کو ہٹاتے دیکھا جا سکتا ہے۔

دریں اثناء اقوام متحدہ میں امریکی ہائی کمیشن نے بحر اومان میں تیل بردار جہازوں پر حملے میں ایران کے ملوث ہونے کے امریکی الزامات کی سختی سے تردید کی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں