کراچی سینٹرل جیل سے قیدیوں کو فرار کرانے میں 7ملزمان کا اہم کردار -
The news is by your side.

Advertisement

کراچی سینٹرل جیل سے قیدیوں کو فرار کرانے میں 7ملزمان کا اہم کردار

کراچی: کراچی سینٹرل جیل سے قیدیوں کے فرار سے متعلق حیرت انگیز انکشافات سامنے آئے ہیں ، قیدیوں کو فرار کرانے میں7ملزمان نے اہم کردار کیا۔

تفصیلات کے مطابق سینٹرل جیل سے قیدیوں کو کس نے اور کیسے فرار کروایا؟ اے آروائی نیوز نے قیدیوں کے فرار کی تفصیلات حاصل کرلیں ہیں، جس کے مطابق کراچی سینٹرل جیل سے قیدیوں کے فرار سے متعلق 7ملزمان کے اہم کردار کا حیرت انگیز انکشافات ہوا۔

زرائع کا کہنا ہے کہ زبیر ایوب، اظہر الدین نے قیدیوں کو بھگانے کی منصوبہ بندی کی، دونوں ملزمان جیل کے باہر سے جوڈیشل کمپلیکس تک پہنچے، جوڈیشل کمپلیکس کے کمرے میں سہولت کار پہلے سے موجود تھے، ملزمان شیونگ کٹ، سلاخیں کاٹنے کے آلات، کپڑے ساتھ لائے تھے۔

ملزمان نے جیل سے نکلنے کے بعد بغیر گاڑی روکے ہری پور تک سفر کیا، ہری پور میں ملزمان نے 3سہولت کاروں کے گھر پر پناہ لی، ملزمان ہری پور میں جس ٹیکسی میں بیٹھے اس کا ڈرائیور گرفتار ہوچکا ہے جبکہ سیکیورٹی اداروں کو مفرور قیدیوں اور سہولت کاروں کی تلاش جاری ہے۔

زرائع کے مطابق قیدیوں کو فرار کرانے میں5اہلکاروں نے غفلت کا مظاہرہ کیا۔


مزید پڑھیں : کراچی سینٹرل جیل سے ہائی پروفائل قیدیوں کے فرار میں جیل حکام ملوث نکلے


یاد رہے اس سے قبل قانون نافذ کرنے والے اداروں کی حیرت انگیز انکشافات پر مبنی رپورٹ سامنے آئی تھی، جس میں ابتدائی تفتیش کے مطابق قیدی جیل حکام کی مل بھگت سے فرار ہوئے۔

واضح رہے کہ سینٹرل جیل سے کالعدم جماعت کے 2 خطرناک قیدی فرار ہوگئے تھے ، جیل حکام نے غفلت برتنے پر 12 اہلکاروں ، سپرٹنڈنٹ ار جیل سپرٹنڈنٹ کو معطل کردیا تھا۔

قیدیوں کی شناخت شیخ محمد ممتاز عرف فرعون اور محمد احمد عرف منا کے ناموں سے ہوئی تھی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں