The news is by your side.

Advertisement

بابا گرونانک کون تھے؟ تعارف

وزیراعظم پاکستان عمران خان 9 نومبر کو کرتار پور راہداری کا افتتاح کریں گے جس میں بھارت کے سابق وزیراعظم من موہن سنگھ اور نوجوت سنگھ سدھو کی شمولیت بھی متوقع ہے۔

بابا گرو نانک کے 550 ویں جنم دن پر سکھ  یاتریوں کے ساتھ اہم شخصیات کو ویزے جاری کیے گئے ہیں۔

تاریخ بتاتی ہے کہ پاکستان کے ضلع ناروال میں کرتار پور ہی وہ مقام ہے جہاں سکھوں کے پہلے گرو نے اپنی زندگی کے آخری ایام بسر کیے تھے۔ اسی مقام پر ان کی ایک سمادھی اور قبر بھی ہے جو سکھوں کے لیے مقدس ہے۔

سکھ مت کے بانی اور پہلے گرو بابا نانک اس دنیا سے 1539 میں رخصت ہوئے تھے۔  بابا گرو نانک کی پیدائش جس علاقے میں ہوئی وہ اب ننکانہ صاحب کہلاتا ہے۔

تاریخ بتاتی ہے کہ گرو نانک صاحب ہندو گھرانے میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کے والد کا نام کلیان چند داس اور والدہ ماتا ترپتا تھیں جب کہ وہ ان کی اکلوتی نرینہ اولاد تھے۔

گرو نانک صاحب نے سنسکرت کے ساتھ باقاعدہ فارسی زبان بھی سیکھی ۔

بابا گرو نانک صاحب نے خود کو ایک معلّم کے طور پر منوایا اور ان کی تعلیمات و روایات کو بہت پزیرائی اور فروغ ملا اور آج سکھ اسی کے مطابق اس مقام پر اکٹھے ہوتے ہیں اور عبادت کرتے ہیں۔

محبت اور خلق خدا سے لگاؤ کی بنیادی تعلیم کی وجہ سے  بڑی تعداد بابا گرو نانک کی پیروکار اور عقیدت مند ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں