The news is by your side.

Advertisement

سعودی شہری نوکریاں کیوں چھوڑنے لگے؟ وجہ سامنے آگئی

ریاض: سعودی عرب میں 3 ماہ کے دوران ایک لاکھ 77 ہزار سعودیوں نے ملازمت سے استعفیٰ دیا۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق مملکت میں ریاض ایوان صنعت و تجارت میں فروغ افرادی قوت کمیٹی کے رکن نایف التمیمی نے مقامی شہریوں کی جانب سے نوکریاں چھوڑنے کی وجہ بتائی ہے۔

نیاف التمیمی کا کہنا ہے کہ سعودی ملازمین کے استعفوں کا ایک پہلو منفی ہے اور دوسرا مثبت ہے۔

انہوں نے بتایا کہ مثبت پہلو یہ ہے کہ سعودی وژن 2030 کی بدولت متعدد ادارے نئی ملازمتیں فراہم کررہے ہیں تو جہاں اچھی ملازمت نظر آتی ہے مقامی ورکرز وہاں چلے جاتے ہیں۔

‘جبکہ استعفوں کا منفی پہلو یہ ہے کہ سعودی ملازم کو اپنی ملازمت کا واضح تصور نظر نہیں آتا اور وہ مستقبل میں ملازمت کے حوالے سے عدم تحفظ کا شکار رہتا ہے۔’

ان کا مزید کہنا تھا کہ کئی سعودی شہری ملازمت چھوڑ کر کسی ایسی جگہ جاب کرلیتے ہیں جہاں انہیں ملازمت کے جانے کا خوف نہیں ہوتا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں