The news is by your side.

Advertisement

فخر زمان نے شاہد آفریدی کے خلاف جارحانہ کھیل کیوں نہیں کھیلا؟، وجہ سامنے آگئی

کراچی: جارح مزاج بیٹر فخر زمان شاہد آفریدی کے خلاف اپنا روایتی کھیل کیوں نہ پیش کرسکے؟ سابق فاسٹ بولر تنویر احمد نے اہم بات کہہ ڈالی۔

تفصیلات کے مطابق اے آر وائی نیوز کے پروگرام ‘اسپورٹس روم ‘ میں گفتگو کرتے ہوئے سابق فاسٹ بولر تنویر احمد نے کہا کہ فخر زمان کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے اسپنرز کے خلاف کچھ سہمے سہمے نظر آئے، انہوں نے شاہد آفریدی اور افتخار احمد کے اوور میں باؤنڈری لگانے کے بجائے سنگل ڈبل رنز لینے پر اکتفا کیا۔

تنویر احمد نے کہا کہ فخرزمان بائیں ہاتھ کے کھلاڑی ہیں جبکہ شاہد آفریدی لیگ اسپنر ہے، انہیں معلوم ہونا چاہیے تھا کہ یہ وہ والے شاہد آفریدی نہیں ہے، شاہد بھائی کی فٹنس اتنی اچھی نہیں ہے، اسلام آباد یونائیٹڈ کے خلاف ان کا اسپیل بہت بُرا تھا، فخر زمان کو ان تمام چیزوں کو مدنظر رکھتے ہوئے آفریدی کے خلاف جارحانہ کھیل کھیلنا چاہیے تھا مگر وہ نہ کرسکے۔

یہ بھی پڑھیں: آسٹریلیا کے خلاف ٹیسٹ سیریز کےلیے قومی اسکواڈ کا اعلان

تنویر احمد نے اپنے تجزئیے میں کہا کہ شاید کپتانی کی دباؤ کے باعث وہ شاہد آفریدی کے خلاف کھل نہ کھیلے، یا پھر وہ شاہد آفریدی کو بہت زیادہ عزت دے دے رہے ہیں جس کے پیچھے اسلام آباد یونائیٹڈ کے خلاف شاہد آفریدی کا بدترین اسپیل بھی ہوسکتا ہے۔

واضح رہے کہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور لاہور قلندرز کے درمیان کھیلے گئے گذشتہ میچ میں جیسن رائے کی شاندار سینچری کی بدولت کوئٹہ نے 205 رنز کا ہدف 4 وکٹوں کے نقصان پر پورا کرلیا تھا۔

یہ دوسرا موقع تھا جب رواں سیزن میں لاہور قلندرز 200 رنز کا دفاع نہ کرسکی۔

 

Comments

یہ بھی پڑھیں