The news is by your side.

Advertisement

قدیم مسجد کی شاہکار پینٹنگ نے تمام ریکارڈ توڑ ڈالے

لندن : ہالی ووڈ کی نامور اداکارہ اینجلینا جولی کی زیرِ ملکیت ایک “تاریخی پینٹنگ” ایک کروڑ 15 لاکھ ڈالر سے زائد میں نیلام ہوگئی۔ قدیم مسجد کا یہ شاہکار سابق برطانوی وزیرِ اعظم ونسٹن چرچل نے بنایا تھا۔

ونسٹن چرچل کے ہاتھ سے بنائی گئی اس پینٹنگ میں مراکش کی قطبیہ مسجد کے مینار اور اس کے ارد گرد کے علاقے کی منظر کشی کی گئی ہے۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق یہ پینٹنگ چرچل نے دوسری عالمی جنگ کے دوران سابق امریکی صدر روز ویلٹ کے لیے بنائی تھی۔

خبر میں کہا گیا ہے کہ امریکی اداکارہ انجیلینا جولی نے سابق برطانوی وزیراعظم ونسٹن چرچل کی بنائی ہوئی پینٹنگ ایک کروڑ 15 لاکھ ڈالر (ایک ارب 80 کروڑ روپے) میں نیلام کردی ہے۔ تاحال اس پینٹنگ خریدنے والے کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی ہے۔

ہالی وڈ اداکارہ کو یہ پینٹنگ ان کے سابق خاوند اداکار بریڈپٹ نے 2011 میں تحفہ دی تھی۔ ٹاور آف قطبیہ مسجد نامی پینٹنگ میں مراکش میں غروب آفتاب کے لمبے سائے اور پُرجوش اشعار پیش کیے گئے ہیں۔

پینٹنگ میں نظر آنے والی تصویر مراکش میں بارہویں صدی میں تعمیر کی جانے والی ایک مسجد کی ہے جس کے عقب میں پہاڑ ہیں اور پینٹنگ میں غروب آفتاب کا منظر دکھایا گیا ہے۔

یہ وہ واحد پینٹنگ ہے جسے برطانوی وزیر اعظم 1939 سے 1945 کے دوران ہونے والی دوسری جنگ عظیم کے زمانے میں بنایا گیا تھا۔

چرچل نے اسے جنوری 1943 می کاسابلانکا کانفرنس کے بعد مکمل کیا تھا۔ چرچل نے اس کانفرنس کے بعد اپنی پینٹنگ امریکی صدر روزویلٹ کو یادگار کے طور پر تحفے میں دی تھی۔

روزویلٹ کی 1945 میں وفات کے بعد اس پینٹنگ کو ان کے بیٹے نے فروخت کر دیا تھا اور اگلے 65 برسوں تک یہ مختلف افراد کی ملکیت رہنے کے بعد 2011 میں ہالی ووڈ اداکارہ اینجلینا جولی اور ان کے شوہر بریڈپٹ نے اسے خرید لیا تھا۔

واضح رہے کہ ماضی میں بھی ونسٹن چرچل کی بنائی گئی کئی پینٹنگز فروخت ہوچکی ہیں اور اب تک ان کی سب سے مہنگی پینٹنگ 18لاکھ پاؤنڈ میں نیلام ہوئی تھی لیکن اب اینجلینا نے اپنے پاس موجود پینٹنگ فروخت کرکے چرچل کی مہنگی ترین پینٹنگ کا نیا ریکارڈ بنالیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں