The news is by your side.

Advertisement

موسم سرما میں‌ دل کی بڑھتی بیماریوں‌ سے محفوظ رہنے کا طریقہ

موسم سرما میں جہاں دیگر بیماریاں پھیلتی ہیں وہیں عارضہ قلب پھیلنے کے خطرات بھی بڑھ جاتے ہیں۔

دنیا بھر میں ہونے والے مختلف تحقیقی مطالعوں میں ماہرین نے موسم سرما میں دل کی مختلف بیماریوں کے حوالے سے خبردار کرتے رہے ہیں کیونکہ اُن کا ماننا ہے کہ سردیوں میں ہارٹ اٹیک، دل کی دھڑکن کابند ہونا اور اریتھیمیا کی بیماریاں عام ہوجاتی ہیں۔

ماہرین نے متعدد مقامات پر ان کی وجوہات بھی بیان کیں اور بتایا کہ سردیوں میں جسم کا درجہ حرارت برقرار رکھنے کے لیے دل پر بوجھ پڑتا ہے، جو بعض اوقات کسی خرابی کی صورت میں سامنے آتا ہے۔

طبی اور تحقیقی ماہرین کہتے ہیں کہ موسم سرما میں اُن لوگوں کو ہارٹ فیل کا خطرہ بڑھ جاتا ہے جن کا دل درست طریقے سے کام نہیں کرتا۔

سردیوں میں عارضہ قلب کی بیماریاں کیوں بڑھتی ہیں؟

موسم سرما میں درجہ حرارت کم ہونے سے اعصابی نظام کمزور پڑتا ہے، جس سے خون کے خلیات کی نشوونما یا حرکت کمزور ہوجاتی ہے۔اس وجہ سے دل کی دھڑکن، بلڈ پریشر اور کولیسٹرول کم ہوتا ہے، جس کے باعث جسم میں خون گاڑھا یا جمتا ہے اور پھر اس صورت میں ہارٹ اٹیک، ہارٹ فیل ہوجاتا ہے۔

احتیاطی تدابیر؟

ماہرین بالخصوص پچاس سال سے زائد افراد کو ہدایت کرتے ہیں کہ وہ سردیوں میں اپنے جسم کے درجہ حرارت کو برقرار رکھیں جبکہ بلڈپریشر کے مریض تبماکو نوشی، ٹھنڈے پانی یادیگر مشروبار سے پرہیز کریں۔

مزید پڑھیں: وہ عادت جس کے باعث فالج اور ہارٹ اٹیک کا خطرہ ہوسکتا ہے

یہ بھی پڑھیں: خواتین میں ظاہر ہونے والی ہارٹ اٹیک کی علامات

علاوہ ازیں چہل قدمی کو معمول بنائیں اور روزانہ کم از کم دس منٹ پیدل چلیں، ٹھنڈے پانی سے نہانے، پنکھے میں جانے سے گریز کریں، کھانے میں مرغن خوراک کا استعمال کم سے کم کریں جبکہ سبزی ، پھل اور ناشتے میں جوس کے استعمال کو یقینی بنائیں۔

یہ 7 عادات ضرور اپنائیں

گرم کپڑوں، دستانوں اور ٹوپے کا استعمال، موسم سرما میں الکحل اور تمباکو نوشی کے استعمال سے گریز،  ذہنی تناؤ سے نجات حاصل کرنا یا دور رہنا،  ورزش کرنا، اپنے طبیب سے معائنہ کروانا، کسی بھی ہنگامی صورت میں فوری اسپتال جانا۔


نوٹ: عارضہ قلب یا کسی سنگین مرض میں مبتلا مریض طبیب سے مشورہ ضرور کریں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں