The news is by your side.

Advertisement

امریکی حکام نے افغانستان سے انخلا کے عمل کو کامیابی قرار دے دیا

واشنگٹن : سینیٹ کمیٹی میں بائیڈن انتظامیہ نے افغانستان سے انخلا کے عمل کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ جس قدر ممکن ہو سکتا تھا انخلا بہتر انداز سے کیا۔

اس حوالے سے وزیردفاع لائیڈ آسٹن نے کہا کہ 17دن میں امریکی تاریخ کا سب سے بڑا فضائی انخلا مکمل کیا، دنیا کی کوئی دوسری فوج یہ کام اِس سے بہتر نہیں کرسکتی، 17دن میں امریکی تاریخ کا سب سے بڑا فضائی انخلا مکمل کیا۔

امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن نے منگل کو سینیٹ کی آرمڈ سروسز کمیٹی کو بتایا کہ کابل سے انخلا کے دوران ایک لاکھ 24ہزار افرادکو نکالا گیا، طالبان کے غیر متوقع تیزی سے قبضے کے بعد ایئر پورٹ پر ہجوم جمع ہوا۔

ریپبلکنز سینیٹرز کا تمام امریکیوں سمیت اتحادیوں کو نکالنے میں ناکامی پر تنقید کرتے ہوئے کہنا ہے کہ افغانستان میں رہ جانے والے افراد کو انتقامی کارروائیوں کے خطرے کا سامنا ہے۔

امریکہ کے اعلیٰ فوجی عہدیدار نے افغانستان سے انخلاء کا دفاع کرتے ہوئے یہ بات زور دے کر کہی ہے کہ ابتدائی مشکلات کے باوجود یہ کوشش ہماری توقعات سے بہتر رہی۔

امریکی حمایت یافتہ افغان حکومت کے خاتمے اور افغانستان سے طیاروں کے ذریعے تمام امریکیوں سمیت افغان اتحادیوں کو نکالنے میں ناکامی پر تنقید ہو رہی ہے کیونکہ وہاں انخلا کے منتظر باقی رہ جانے والے افراد کو طالبان کی جانب سے انتقامی کارروائیوں کے خطرے کا سامنا ہے۔

آسٹن نے مزید کہا،”کیا یہ ہر اعتبار سے درست تھا؟ یقیناً نہیں۔ طیاروں کے ذریعے انخلا کے پہلے دو دنوں کو “مشکل” قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ طالبان کے غیر متوقع طور پر تیزی سے قبضے کے بعد ایئر پورٹ پر بہت بڑا ہجوم جمع ہو گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں