خواتین کو مردوں کی نسبت زیادہ نیند کی ضرورت -
The news is by your side.

Advertisement

خواتین کو مردوں کی نسبت زیادہ نیند کی ضرورت

ماہرین کا کہنا ہے کہ ہر شخص کے بارے میں یہ سوچنا کہ اس کے لیے 8 گھنٹوں کی نیند کافی ہے، ایک نہایت غلط تصور ہے۔ خواتین کو مردوں کی نسبت زیادہ نیند کی ضرورت ہوتی ہے۔

حال ہی میں کی جانے والی ایک تحقیق کے مطابق خواتین کو مردوں کے سونے کی مدت سے 20 منٹ زیادہ نیند کی ضرورت ہوتی ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اس کی وجہ خواتین کے دماغ کی ساخت اور اس کے بیک وقت سر انجام دیے جانے والے مختلف افعال ہیں۔

مزید پڑھیں: خواتین بے چینی کا شکار کیوں ہوتی ہیں؟

انہوں نے بتایا کہ خواتین کے دماغ کو مردوں کے دماغ کی نسبت زیادہ محنت کرنی پڑتی ہے۔ ان کے دماغ کا ہر حصہ ایک ہی وقت میں مختلف کام سر انجام دے رہا ہوتا ہے۔ یہ ایک عام اصول ہے کہ جو چیز زیادہ استعمال میں ہو اور سخت محنت کرے اسے آرام کی ضرورت بھی زیادہ ہوتی ہے۔

آپ نے اپنے گھر میں موجود خواتین خانہ کو بھی دیکھا ہوگا کہ وہ ایک وقت میں کئی کام کر رہی ہوتی ہیں اور ان کا دماغ مختلف جگہوں پر منسلک ہوتا ہے۔ گھر میں موجود تمام افراد کی مختلف ضروریات کو پورا کرنا، کچن کے کام، گھر کے دیگر حصوں کے کام، گھر میں آنے والے مختلف افراد جیسے کام والی، دودھ والے اور سبزی والے سے نمٹنا یہ سب کام وہ ایک وقت میں انجام دے رہی ہوتی ہیں۔

women-2

یہ صورتحال اس وقت مزید پیچیدہ ہوجاتی ہے جب خاتون خانہ ملازمت پیشہ بھی ہوں۔ ایسے میں وہ گھر اور دفتر کے دس جھمیلوں سے بیک وقت برسر پیکار ہوتی ہیں۔

دوسری جانب مرد ایک وقت میں ایک ہی کام کرنے کے عادی ہوتے ہیں۔ سائنسی تحقیق میں یہ بات ثابت کی جاچکی ہے کہ مردوں کے دماغ میں اتنی صلاحیت نہیں ہوتی کہ وہ بیک وقت کئی میدانوں میں اتر سکیں۔ وہ ایک وقت میں کسی ایک چیز یا کسی ایک ہی کام پر توجہ مرکوز رکھ سکتے ہیں۔

مزید پڑھیں: مثبت سوچ کی حامل خواتین کی عمر لمبی

اسی طرح خواتین کے دماغ میں جمع ہونے والی معلومات کی مقدار بھی مردوں کے مقابلے میں 5 گنا زیادہ ہے۔ یعنی ایک مرد اگر ایک چیز کو یاد رکھ سکتا ہے تو اسی وقت میں ایک خاتون 5 چیزوں کو یاد رکھ سکتی ہے۔

یہی وجہ ہے کہ دن کے اختتام پر خواتین کا دماغ اتنے بہت سے کام کر کے تھک جاتا ہے اور اسے مردوں کے مقابلے میں زیادہ آرام کی ضرورت ہوتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں