The news is by your side.

Advertisement

پاک افغان بارڈر پر باڑ لگانے کا سلسلہ جاری ہے، ڈی جی آئی ایس پی آر

راولپنڈی: پاک فوج کے شعبہ تعلقاتِ عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا ہے کہ پاک افغان بارڈر پر باڑ لگانے کا سلسلہ جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ پاکستان اور افغانستان کی سرحد پر باڑ لگانے کا عمل جاری ہے۔

دسمبر 2019 تک پاک افغان سرحد پر باڑ کا کام مکمل کر لیا جائے گا۔

آئی ایس پی آر

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ 843 قلعوں میں سے 233 قلعوں پر کام مکمل ہو گیا ہے۔

پاک فوج کے شعبۂ تعلقاتِ عامہ کے مطابق 1200 کلو میٹر میں سے 802 کلو میٹر باڑ پر کام مکمل کر دیا گیا ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ دسمبر 2019 تک پاک افغان سرحد پر باڑ کا کام مکمل کر لیا جائے گا، باڑ لگانے سے دہشت گردوں کی نقل و حرکت محدود کی جا سکے گی۔

میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ پاک افغان سرحد پر باڑ لگانے سے پاکستان اور افغانستان کے پُر امن لوگوں کو فائدہ ہوگا۔


یہ بھی پڑھیں:  پاک افغان سرحد پر 70کلو میٹر تک خاردار تاریں نصب،25 چیک پوسٹیں بھی ختم


یاد رہے کہ پاک افغان سرحد پر خاردار تاریں لگانے کا عمل کچھ عرصے سے جاری ہے، 5 مئی 2018 تک شمالی وزیرستان میں 70 کلو میٹر رقبے تک باڑ لگائی گئی تھی۔

جون 2017 میں پاک افغان سرحد پر باڑ لگانے کا پہلا مرحلہ مکمل کیا گیا تھا، پہلے مرحلے میں باجوڑ، مہمند اور خیبر ایجنسی میں باڑ لگائی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں