مسجد الحرام میں دنیا کی سب سے بڑی چھتری چند روزمیں نصب کردی جائے گی
The news is by your side.

Advertisement

مسجد الحرام میں دنیا کی سب سے بڑی چھتری چند روزمیں نصب کردی جائے گی

مکہ مکرمہ : مسجد الحرام کے شمال مغربی صحن میں دنیا کی سب سے بڑی چھتری چند روزمیں نصب کردی جائے گی، جس کے سائے میں ساڑھے تین ہزار افراد نماز ادا کرسکیں گے۔

تفصیلات کے مطابق مسجدالحرام کے وسیع و عریض صحن میں دُنیا کی سب سے بڑی چھتری عنقریب نصب کر دی جائے گی، جس کے باعث صحن میں نماز ادا کرنے والے حاجیوں اور عمرہ زائرین کو شدید گرمی اور دھوپ سے بچایا جا سکے گا۔

سعودی عرب کی حکومت کی جانب سے مسجد الحرام میں جاری توسیع کے تیسرے مرحلہ میں لگائی جانے والی چھتری کے سائے میں ساڑھے تین ہزار افراد نماز ادا کرسکیں گے۔

چھتری کا رقبہ 53×53میٹر اور وزن تقریبا 600 ٹن ہوگا جبکہ اونچائی 45 میٹر ہوگی۔

صحن میں دی جانے والی دیگر سہولیات میں آب زمزم کی مستقل فراہمی ،وضوخانے،اطلاعاتی بورڈز،صوتی نظام اور سی سی ٹی وی کیمرے لگےہوں گے۔

دُنیا کی سب سے بڑی چھتری جرمنی میں خصوصی طور پر تیار کی گئی ہیں، جس کو کلوز سرکٹ ٹی وی کیمروں، لاؤڈ سپیکر سسٹم، ہوا کو معطر رکھنے کے نظام سے بھی آراستہ کیا گیا ہے۔

جس کمپنی نے اسے ڈیزائن کیا ہے، سعودی حکومت نے انہیں پابند کیا ہے کہ اس کا ڈیزائن صرف اور صرف خانہ کعبہ کیلئے ہی کریں گے۔

واضح رہے کہ 2008 کے دوران سعودی حکومت نے مسجد حرام کے صحن کو ڈھانپنے کیلئے بہت ہی بڑی بڑی چھتریاں لگانے کا منصوبہ بنایا تھا۔

سال 2014 میں اپنی وفات سے کچھ روز قبل سعودی فرماں روا شاہ عبداللہ نے مسجد الحرام میں عبادت گزاروں کی سہولت کے لیے خصوصی چھتریوں کی تنصیب کا فرمان جاری کیا تھا۔

اس سے قبل مدینہ منورہ میں تقریباً 250 ایسی ہی چھتریاں نصب کی گئی تھیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں