The news is by your side.

Advertisement

پنجاب کی سابق حکومت کی جعلی صحت اسکیم، عوام کو اربوں روپے کا چونا

لاہور: سابق وزیر اعلیٰ شہباز شریف کی حکومت کے ایک اور سکینڈل کا پردہ فاش ہوگیا، سابق حکومت نے جعلی صحت اسکیموں سے عوام کو اربوں روپے کا چونا لگایا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب کی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے سابق وزیر اعلیٰ شہباز شریف کی حکومت کے ایک اور سکینڈل اور نااہلی سے پردہ فاش کردیا۔ سابق پنجاب حکومت نے من پسند نجی کمپنی میڈی ارج کے ساتھ پنجاب بھر میں 20 موبائل ہیلتھ یونٹ چلانے کا معاہدہ طے کیا تھا۔

وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد کا کہنا تھا کہ معاہدے کے مطابق ایک موبائل ہیلتھ یونٹ پر ماہانہ 25 لاکھ روپے خرچ ہوتے رہے۔ حکومت پنجاب اب اسی فری موبائل ہیلتھ یونٹ کو 25 لاکھ کے بجائے ماہانہ صرف 10 لاکھ روپے کے اخراجات پر ہزاروں مریضوں کو مفت علاج معالجے کی سہولت فراہم کر رہی ہے۔

صوبائی وزیر نے کہا کہ فری موبائل ہیلتھ یونٹس لاہور، ملتان، بہاولپور، شیخوپورہ اور رحیم یار خان کے دور دراز علاقوں میں مریضوں کو بہترین علاج معالجہ کی مفت سہولت فراہم کر رہے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ فری موبائل ہیلتھ یونٹس کے ذریعے اب تک ڈیڑھ لاکھ سے زائد مریضوں کو مفت علاج معالجے اور ادویات کی سہولت فراہم کر چکے ہیں۔ مریض فری موبائل ہیلتھ یونٹس کے ذریعے ایکسرے، الٹرا ساؤنڈ، تمام بلڈ ٹیسٹس، اور آکسیجن سمیت مفت ادویات کی سہولت سے مستفید ہو سکتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ شہباز شریف کی کرپٹ حکومت نے ماضی میں جعلی صحت اسکیموں سے عوام کو اربوں روپے کا چونا لگایا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں