The news is by your side.

Advertisement

پارک لین ریفرنس : آصف زرداری پر فرد جرم کی کارروائی ٹل گئی

اسلام آباد : احتساب عدالت نے پارک لین ریفرنس میں سابق صدر آصف زرداری سمیت شریک ملزمان پرفردجرم کی کارروائی پھر موخر کردی اور نیب سے آصف زرداری کی نئی درخواست پر 14 جولائی کو جواب طلب کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں پارک لین ریفرنس سے متعلق سماعت ہوئی، جج اعظم خان نے سماعت کی ، عدالتی حکم پرکراچی میں سابق صدرسمیت دیگرملزم ویڈیولنک پرحاضر ہوئے ، امراض قلب اسپتال میں انورمجید اور تین ملزمان کے لئے احتساب عدالت کراچی میں وڈیو لنک انتظامات کئے گئے تھے۔

سماعت شروع ہوئی تو وکیل فاروق ایچ نائیک نے سابق صدرآصف زرداری پر فرد جرم عائد نہ کرنے کی درخواست دائر کی، جج اعظم خان نے وکیل فاروق ایچ نائیک سے کہا کہ آپ کو چاہیے تھا کہ یہ درخواست پہلے دائر کرتے،اب فرد جرم عائد کرنے کے لیے وڈیو لنک کے انتظامات مکمل کر لیے گئے ہیں۔

جس پر وکیل کا کہنا تھا کہ اس کے لیے پڑھنا پڑتا ہے، چیزیں نکالنی پڑتی ہیں ،گورنر اسٹیٹ بینک کے لیے قانون کے مطابق نوٹس دینا ضروری تھا، جان بوجھ کر ڈیفالٹ کی گئی کمپنی کے لیے قانون واضح ہے۔

عدالت نے کہا ہم نےفردجرم کے لیے انتظام کرلیاآپ نےنئی درخواست دےدی، تو وکیل آصف زرداری کا کہنا تھا کہ ریفرنس میں مالیاتی قوانین کونظراندازکرکےریفرنس بنایاگیا، اسٹیٹ بینک کےریفرنس کے بغیر نیب ایکشن نہیں لے سکتا۔

ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب سردارمظفرعباسی کا کہنا تھا کہ آپ اس درخواست پرہمیں نوٹس جاری کریں، ہم آج ہی آدھےگھنٹےمیں بحث کریں گے،جج اعظم خان نے کہا اس ریفرنس کو دائر ہوئے ایک سال کا عرصہ گزر چکا ہے۔

فاروق ایچ نائیک نے سوال کیا پراسیکیوٹرکواس کیس میں اتنی جلدی کیاہے؟ اس کےعلاوہ بھی بہت سےکیسزہیں،اس کیس میں جلدی کیوں؟ ہمیں مناسب وقت دیاجائے،ایک ماہ کا اسٹے آرڈر نہیں مانگ رہا، وکیل صفائی اپنی درخواست دائرکرکےخودوقت مانگ رہےہیں، جس پر سردارمظفرعباسی نے کہا جواب نیب نےداخل کرناہےتوہمیں مہلت مانگنی چاہیے تھی۔

وکیل نے مزید کہا یہ قرض ڈیفالٹ کامقدمہ ہے،اسٹیٹ بینک نےایکشن لیناتھا تو نیب کا کہنا تھا کہ آصف زرداری پر اختیار کے ناجائز استعمال، دھوکادہی اور فراڈ کا مقدمہ ہے۔

عدالت نے آصف زرداری کی پارک لین ریفرنس خارج کرنے کی درخواست پرنیب کونوٹس جاری کردیا ، ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب نے کہا ہم نے نوٹس وصول کرلیا، آج ہی جواب اور دلائل دیں گے،عدالت آصف زرداری کی درخواست پرفیصلہ کرے۔

نیب نے استدعا کی عدالت آج ہی آصف زرداری سمیت تمام ملزمان پرفردجرم عائدکرے تو فاروق ایچ نائیک کا کہنا تھا ،ہ مجھےاپنی درخواست پردلائل دینےکےلیےوقت درکار ہے، 9 جولائی کو کراچی میں کیس لگاہے ،آئندہ منگل تک کا وقت دےدیں ، ہم تیاری کرکےآئیں گے۔

جج اعظم خان نے کہا ہم کل یاپرسوں کاوقت رکھ لیتےہیں، تو وکیل آصف زرداری کا کہنا تھا کہ صرف ایک ہفتے کاوقت دے دیں، عدالت نے مزید کہا ہم9جولائی کاوقت دے رہے ہیں اس سے زیادہ نہیں دے سکتے۔

احتساب عدالت نے پارک لین ریفرنس میں آصف زرداری پرفرد جرم کی کارروائی پھر مؤخر کرتے ہوئے سماعت 14 جولائی تک ملتوی کردی اور آئندہ سماعت پرآصف زرداری کی متفرق درخواست پرنیب جواب داخل کرانے کی ہدایت کی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں