site
stats
پاکستان

لڑکی کو جلانے والی ماں، بھائی اور بہنوئی کا ریمانڈ

لاہور: انسداد دہشت گردی لاہور کی خصوصی عدالت نے پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کو زندہ جلانے کے الزام میں گرفتار تین ملزمان کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوا دیا۔

پولیس کی جانب سے ملزمان کو سخت سیکیورٹی میں پیش کیا گیا۔ تفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ مقتولہ زینت کی ماں پروین، بھائی انیس اور بہنوئی ظفر نے پسند کی شادی کرنے پر زینت کو تیل چھڑ ک کر زندہ جلا دیا۔

پولیس کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا کہ ملزمان سے تفتیش مکمل ہو چکی ہے اور پروین بی بی نے جرم بھی قبول کر لیا ہے لہذا ملزمان کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوا دیا جائے جس پر عدالت نے پولیس کی استدعا پر تینوں ملزمان کو چودہ روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوا دیا۔

واضح رہے کہ لاہور کی رہائشی زینت کو پسند کی شادی کرنے پر زندہ جلا دیا گیا تھا جس پر پولیس نے اس کی ماں، بھائی اور بہنوئی کو گرفتار کرلیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top