The news is by your side.

Advertisement

’’ایف اے ٹی ایف کی آڑ میں نیب قوانین میں تبدیلی کا مطالبہ دشمنی ہے‘‘

اسلام آباد:  وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے اوورسیز پاکستانی زلفی بخاری کا کہنا ہے کہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کی آڑ میں نیب قوانین میں تبدیلی کا مطالبہ دشمنی کے مترادف ہے۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق معاون خصوصی برائے اوورسیز پاکستانی زلفی بخاری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ ایف اے ٹی ایف کی آڑٖ میں نیب قوانین میں تبدیلی کا مطالبہ کرنے والے پاکستان اور ہماری آئندہ نسلوں کے دشمن ہیں۔

انہوں نے کہا کہ نئے قانون غیرقانونی دولت چھپانے والوں کے سوا ہر ایک کے مفاد میں ہے۔

معاون خصوصی زلفی بخاری نے ایف اے ٹی ایف قوانین کے حق میں سوشل میڈیا پر ٹرینڈ بھی جاری کردیا۔

واضح رہے کہ  حکومت نے ایف اے ٹی ایف اور زیرالتوابل ہر صورت پاس کرانے کا فیصلہ کرلیا، ذرائع کا کہنا ہے کہ قومی اسمبلی کااجلاس 7ستمبرکی شام 4بجےطلب کرلیا ہے جبکہ پارلیمنٹ کامشترکہ اجلاس آئندہ ہفتےبلائے جانے کا امکان ہے۔

ذرائع کے مطابق حکومتی واتحادی اراکین کی حاضری یقینی بنانے کیلئے رابطے جاری ہے ، اس سلسلے میں قومی اسمبلی کےچیف وہپ عامرڈوگر نے حکومتی واتحادی اراکین سے رابطے کرکے اجلاس میں شرکت یقینی بنانے کی ہدایت کردی ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ایف اےٹی ایف سےمتعلق اپوزیشن اوربھارت ایک پیج پرہیں، ہرجمہوریت میں اپوزیشن کاملک کےلیےاہم کردارہوتاہے، اپوزیشن صرف اپنی کرپشن بچانےکیلئےملک کونقصان پہنچارہی ہے، اپوزیشن اینٹی منی لانڈرنگ قانون میں ذاتی مفادکی ترامیم چاہتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں