The news is by your side.

بشریٰ بی بی کیساتھ لیک مبینہ آڈیو پر زلفی بخاری کا ردعمل آگیا

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما زلفی بخاری نے عمران خان کی اہلیہ بشریٰ بی بی کے ساتھ لیک مبینہ آڈیو پر اپنے ردعمل کا اظہار کر دیا۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے بیان میں زلفی بخاری نے کہا کہ پہلے کہا گیا کہ عمر ظہور نامی کسی شخص کو فرح گوگی کے ذریعے گھڑیاں بیچی گئیں، لیکن جب ان کو قانونی نوٹس بھیجا گیا تو اب نئی کہانی سامنے آگئی۔

زلفی بخاری نے کہا کہ اب کہا جا رہا ہے کہ اصل میں یہ گھڑی میرے ذریعے بیچی گئی، میں واضح کر دوں کہ کوئی گھڑی میں نے لی نہ میں نے بیچی۔

رہنما پی ٹی آئی نے کہا کہ اس طرح کی کٹ کاپی پیسٹ والی آڈیو بچے بھی بنا لیتے ہیں۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ آڈیو کا فوری فرانزک کرایا جائے، اس کے لیے میں پیسے اپنی جیب سے دینے کو تیار ہوں۔

یاد رہے کہ سوشل میڈیا پر بشریٰ بی بی اور زلفی بخاری کے درمیان ہونے والی گفتگو کی مبینہ آڈیو گردش کر رہی ہے جس میں دونوں گھڑیوں سے متعلق بات کر رہے ہیں۔

آڈیو میں بشریٰ بی بی کہتی ہیں: ’خان صاحب (عمران خان) کی کچھ گھڑیاں ہیں۔ انہوں انھوں نے کہا ہے کہ آپ کو بھیج دوں تاکہ فروخت کر دیں۔ یہ گھڑیاں خان صاحب کے استعمال میں نہیں ہیں۔‘

اس پر زلفی بخاری نے کہا: ’ضرور مرشد میں کر دوں گا۔‘

خیال رہے کہ اس سے قبل زلفی بخاری نے توشہ خانہ کی گھڑی کی فروخت کے حوالے سے اہم وضاحت دی تھی۔

اے آر اے وائی نیوز کے پروگرام ’اعتراض ہے‘ میں انہوں نے بتایا تھا کہ کہ عمران خان نے گھڑی کی فروخت سے رقم پر کیپٹل گین ٹیکس دیا ہوا ہے اور اس کی رقم بھی ڈیکلیئر کی ہوئی ہے۔

انہوں نے بتایا تھا کہ عمران خان کی جانب سے گھڑی کی رسیدیں بھی دکھائی گئی ہیں لیکن مذکورہ چینل اب ایک اور شخص کو سامنے لے کر آیا ہے جس نے 24 گھنٹے میں 2 ویڈیوز بنائیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں