The news is by your side.

Advertisement

امریکا:وفاقی عدالت نے خفیہ نگرانی پروگرام کو آئین کی خلاف ورزی قرار دے دیا

امریکا کی وفاقی عدالت نے خفیہ نگرانی پروگرام کو آئین کی خلاف ورزی قرار دے دیا، اسنوڈن کا کہنا ہے کہ عدالت نے ان کے انکشافات کا جواز پیش کردیا ہے۔

اسنوڈن کی جانب سے امریکی خفیہ پروگرام کے انکشاف کے بعد امریکی عدالت میں مقدمے کی سماعت کے دوران جج رچرڈ لیون نے امریکی عوام کی فون کالز ڈیٹا کی نگرانی کو آئین کی چوتھی ترمیم کی خلاف ورزی قرار دیا، نیشنل سیکیورٹی ایجنسی نے موقف اختیار کرتے ہوئے کہا تھا کہ نگرانی ممکنہ دہشتگردی کے حملوں سے حفاظت کے لیے کی جا رہی ہے۔

جج رچرڈ لیون نے ایجنسی کے اس موقف پر شکوک شبہات کا اظہار کیا، عوامی سطح پر بھی خفیہ پروگرام کی مخالفت کی گئی ہے، اسنوڈن نے برطانوی اخبار کو بیان دیتے ہوئے کہا کہ عدالتی فیصلہ خوش آئند ہے اور انہیں یقین تھا کہ خفیہ پروگرام آئین سے مطابقت نہیں رکھتا ہے۔
   

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں