The news is by your side.

Advertisement

ذوالفقارمرزا کی متنازعہ ویڈیو، پولیس اہلکاروں کو ہراساں کرنے کا مقدمہ درج

کراچی: سابق وزیرِ داخلہ ذوالفقار مرزا کی درخشاں تھانے پہنچ کر عملے کوہراساں کرنے کی ویڈیو فوٹیج اے آروائی نیوز پر نشرہونے کے بعد ان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

 تفصیلات کے مطابق مقدمہ کرائم برانچ کے مدعیت میں درج کرایا گیا ہے مقدمے کا نمبر 285 ہے۔ مقدمے میں پولیس عملے کو ہراساں کرنے کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔

سابق وزیرداخلہ گزشتہ روز اپنا بیان ریکارڈکرانے کراچی کے علاقے ڈیفنس میں واقع درخشاں تھانے پہنچے تو ان کا انداز انتہائی جارحانہ تھا۔

اے آر وائی نیوز کو موصول ہونے والی ویڈیو فوٹیج میں واضح دیکھا جاسکتا ہے کہ ذوالفقارمرزا اپنے محافظوں کو تھانے کے گرد پھیل کرپوزیشن سنبھالنے کا حکم دے رہے ہیں۔

واضح رہے کہ ذوالفقارمرزا کے ہمراہ کئی درجن مسلح محافظ تھے جنہیں ذوالفقارمرزا نے ہدایت دی کہ گڑبڑ کی صورت میں سیدھی گولیماردینا۔

ذوالفقارمرزا کو ایسے جارحانہ احکلامات جاری کرتے ہوئے ویڈیو میں صاف دیکھا جاسکتا ہے۔

یاد رہے کہ ذوالفقار مرزا ماضی میں ایسے بیان دے چکے ہیں کہ ’’ان کے پاس درجنوں ایسے افراد موجود ہیں جو کہ ان کے اشارے پر جان دے ببھی سکتے ہیں اور لے بھی سکتے ہیں‘‘۔

ویڈیو کے ردعمل میں صوبائی وزیراطلاعات شرجیل انعام میمن کا کہنا تھا کہ ذوالفقار مرزا کو عدالت نے نجی گارڈز رکھنے کی اجازت دی ہے لیکن تو مسلح ملیشیا ساتھ لے کر گھوم رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ویڈیو کی جانچ پڑتال کی جارہی ہے اور اس پر کاروائی کی جائے گی۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں