The news is by your side.

Advertisement

قصور: پیش امام کو نفرت انگیز تقریر پر 5سال قید کی سزا

لاہور: انسدادِ دہشت گردی عدالت نے قصور میں مسجد کے پیش امام کو اجتماع کے دوران نفرت انگیز تقریر کے زریعے انتشار پھیلانے  پر پانچ سال قید کی سزا سنادی۔

تفصیلات کے مطابق قاری ابوبکر پر کورٹ رادھا کشن پولیس اسٹیشن کے سب انسپکٹر کی مدعیت میں انسدادِ دہشت گردی ایکٹ کی دفعہ 9 کے تحت مقدمہ قائم کیا گیا تھا۔

عدالت میں پراسیکیوٹر نے بتایا کہ پیش امام کو عوامی اجتماع کے دوران ایک مخصوص مکتبہ فکر کیخلاف نفرت انگیز تقریر کرتے ہوئے گرفتار کیا گیا جبکہ مذکورہ تقریر کی ویڈیو بھی عدالت کے سامنے پیش کی گئی۔

اس سے قبل قاری ابوبکر نے الزامات کو مسترد کردیا تھا او کہا تھا کہ وہ اس اجتماع میں موجود ہی نہیں تھے، پیش امام کے وکیل نے اپنے مؤکل کی ضمانت کی استدعا کرتے ہوئے کہا کہ قاری ابوبکر پر خود ساختہ اور چھوٹا مقدمہ قائم کیا گیا ہے۔

جج ہارون لطیف نے پیش امام کو مجرم قرار دیتے ہوئے پانچ سال قید کی سزا سنا دی۔

زرائع کے مطابق رواں سال نفرت پھیلانے والی تقاریر کرنے پر 21 افراد کو سزا سنائی جاچکی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں