The news is by your side.

ملائیشین طیارے کی تباہی، سلامتی کونسل کا اجلاس آج طلب

یوکرائن : ملائیشیا کے طیارے کی تباہی پر اقوام متحدہ کا ہنگامی اجلاس طلب کرلیا گیا ہے، ملائیشیا کے وزیراعظم نجیب رزاق نے حادثے پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگر طیارہ گرایا گیا ہے تو مجرموں کو انصاف کے کٹہرے میں لائیں گے۔

یوکرائن کی فضائی حدود میں ملائیشین ائیرلائنز کا طیارہ ایم ایچ سترہ گرکرتباہ ہوگیا اور اس میں سوار عملے کے ارکان سمیت دو سو اٹھانوے افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے، طیارے کے مسافروں میں سے ایک سوچون مسافروں کا تعلق ہالینڈ سے تھا، جہاں مرنے والوں کے لئے سوگ منایا جا رہا ہے۔

ملائیشین طیارے کو میزائل سے نشانے بنانے کی اطلاعات کے بعد الزامات کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے، یوکرائن نے طیارے کی تباہی کا ذمہ دار روس کو قرار دیا ہے جبکہ روس کا کہنا ہے یوکرائن نے طیارہ مار گرایا ہے، روسی صدر ولادی میرپیوٹن کا کہنا ہے کہ مشرقی یوکرائن میں فوجی آپریشن نہیں ہوتا تو طیارے کو حادثہ پیش نہیں آتا۔

امریکی صدربراک اوباما نے طیارے کے حادثے پر گہرے دکھ کا اظہارکیا، ملائیشین وزیراعظم اور یوکرائن کے صدر سے ٹیلی فون پر گفتگو میں امریکی صدر نے حادثے کوبڑا سانحہ قراردیا۔

ملائیشین طیارے کی تباہی کے بعد نو ملکوں نے اپنی پروازیں یوکرائن کے لئے بند کردی ہیں، یورپی سیکورٹی اورتعاون کی تنظیم نے طیارے کی تباہی کی وجوہات کا پتہ لگانے کے لئے ٹیم یوکرائن بھیجنے کا اعلان کیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں