site
stats
پاکستان

مولانا مسعود کا قتل فرقہ وارانہ فساد کی سازش ہے،سیاسی ومذہبی رہنماء

کراچی: جامعہ بنوریہ کے معلم اورمفتی نعیم کے داماد مولانامسعودبیگ کے بہیمانہ قتل پرالطاف حسین سمیت دیگرسیاسی ومذہبی جماعتوں کے رہنماؤں نے اظہارِمذمت کیا ہے،مولانا مسعود بدھ کے روز ہونے والے قاتلانہ حملے میں جاں بحق ہوگئے تھے۔

 کراچی میں فرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ ایک بار پھرعروج پر پہنچ گئی ہے، سیاسی و مذہبی جماعتوں کی جانب سے جامعہ بنوریہ کے معلم مولانامسعودبیگ کےقتل کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی ہے۔

متحدہ کے قائد الطاف حسین کی جانب سے مذمتی بیان میں کہا گیا ہے کہ مولانامسعودکا قتل فرقہ وارانہ فسادات بھڑکانے کی سازش کاحصہ ہے، ٹارگٹ کلنگ کے واقعات فورسز کی کارکردگی پرسوالیہ نشان ہیں۔ اُنہوں نے قاتلوں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہوئے مولانا مسعود کے اہل خانہ سے تعزیت کا اظہار بھی کیا۔

وزیرِ اطلاعات سندھ شرجیل میمن نے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ مولانا مسعودکے قاتلوں کو کیفرِکردارتک پہنچایا جائے گا،مولانا محمد احمد لدھیانوی نے کہا کہ واقعہ قابل مذمت ہے علما کے تسلسل سے ہونے والے قتل عام کا نوٹس لیا جائے۔

مولانا اورنگزیب فاروقی نے واقعے کی مذمت کرتے ہوئےقاتلوں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیاہے۔ جمعیت علما ئےپاکستان کے مرکزی صدر پیر اعجاز ہاشمی نےمولانا مسعود بیگ کے قتل پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹرعلامہ اکبر کمیلی کے بعد مولانا مسعود بیگ کا قتل فرقہ واریت پھیلانے کی سازش ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top