وی وی آئی پی کلچر کا خاتمہ شروع ہوگیا ہے، طاہرالقادری -
The news is by your side.

Advertisement

وی وی آئی پی کلچر کا خاتمہ شروع ہوگیا ہے، طاہرالقادری

اسلام آباد: طاہرالقادری نے کہا کہ پی ٹی وی کے حملے میں خود پی ٹی وی کے ملازمین شامل ہیں۔

اسلام آباد میں دھرنے کے شرکاء سے خطاب میں پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ علامہ ڈاکٹر طاہر لقادری کا کہنا تھا کہ اطلاع ہے پی ٹی وی پر حملے کو جواز بنا کرآج رات حکومت پولیس کے ذریعے مظاہرین پر تشدد کی تیاری کر رہی ہے، اگر تشدد کیا گیا تو ہم دفاع کریں گے، میں خود لوگوں کی قیادت کروں گا اور حکومت کا حشرایسا عبرت ناک ہو گاکہ کسی کو آگے بڑھنے کی جرات نہیں ہو گی، اگر آج رات حملے کی کوشش کی گئی تو ’دمادم مست قلندر‘ہو گا۔

ان کا کہنا تھا کہ عوام جاگ گئی ہے، لوگوں نے ان حکمرانوں کے وی آئی پی کلچر کے خلاف بغاوت کر دی ہے، یہ شعور اس انقلاب مارچ نے دیا ہے، جھنگ کے ایک علاقے میں آج ایک سیلاب زدہ شخص نے وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف کو جوتا دے مارا ہے ، کل سکھر میں وزیر اعلی سندھ کی آمد پر سڑک بند کر دی گئی، ممبران قومی اسمبلی کی گاڑیوں کے چالان ہو رہے ہیں،یہ اس انقلاب مارچ کی دی ہوئی بیداری ہے۔

طاہرالقادری نے دعویٰ کیا کہ پی ٹی وی پر حملے کے ملزمان کی جاری کی گئی تصاویر میں 6لوگ پی ٹی وی کے ملازم ہیں ان میں کینٹین کا ملازم ،اسی محکمے کے اپنے ملازمین اور انجینئرز بھی شامل ہیں، حکومت ان لوگوں کو ہمارے کارکن قرار دے کر لوگوں کو بے وقوف بنا رہی ہے، ہم نے ۶ افراد کی شناخت کر لی ہے اب حکومت حملہ آوروںکی شناخت کی اعلان کردہ رقم میں 6لاکھ انقلاب مارچ کو جمع کروا دے، اگر عام لوگ پی ٹی وی پر حملہ آور ہوتے تو سارا سامان توڑ دیتے15 منٹ بعد اس ادارے کی نشریات بحال نہ ہو جاتیں، ماروی میمن کی باتیں خاموشی سے سننے والے ہمارے کارکن نہیں تھے بلکہ مسلم لیگ ن کے ملازم تھے۔

انہوں نے کہا کہ ریمنڈ بیکر نے اپنی کتا ب میں تحریر کیا کہ موٹر وے کی تعمیر کے دوران میاں نواز شریف نے 6ارب روپے کی کمیشن لی، گندم کی درآمد میں بھی اتنی ہی رقم کمائی گئی اور بڑی بڑی رقوم غیر قانونی طور پر بیرون ملک منتقل کی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں