The news is by your side.

Advertisement

کراچی بارش: شہریوں کے لئے زحمت بن گئی، بجلی غائب، سڑکیں تالاب میں تبدیل

کراچی: شہر قائد میں ایک بار پھر تیز بارش کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے مختلف علاقوں میں مسلسل دوسرے روز بھی تیز بارش کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے، ملیر، گلشن حدید،کاٹھور، گلزارہجری، گلستان جوہر، یونیورسٹی روڈ شارع فیصل،جیل روڈ ، ڈیفنس، جہانگیرروڈ، گارڈن، صدر،گرومندر،طارق روڈ، لیاقت آباد،اورنگی ٹاؤن، ایئرپورٹ، نیشنل اسٹیڈیم اورگلشن اقبال سمیت آئی آئی چندریگرروڈپر بادل جم کر برسے۔

تیز بارش کے نتیجے میں سڑکوں پر پانی جمع ہوگیا جس کے باعث ٹریفک کی روانی متاثر ہوئی اور شہر کی مختلف شاہراہوں پر ٹریفک جام کے مناظر دیکھنے کو ملے۔

بارشوں کے دوران کئی منچلے ویڈیو اور سیلفی بناتے بھی نظر آئے اور وہ سہانے موسم کا مزہ لیتے رہے۔

یہ بھی پڑھیں: کراچی میں بارشیں: کرنٹ لگنے سے کمسن بچی سمیت 4 افراد جاں بحق

دوسری جانب شہر میں بارش کے دوران کےالیکٹرک سسٹم ایک بار بھر پھربیٹھ گیا ہے، آج ہونے والی بارش کے باعث 215سے زائد فیڈرز سے بجلی کی فراہمی بند ہوچکی ہے، متاثرہ علاقوں میں سرجانی، منگھو پیر،نارتھ کراچی،نارتھ ناظم آباد، لانڈھی،کورنگی،گلشن اقبال،گلشن معمار ملیر،گڈاپ، اورنگی، بلدیہ اتحادٹاؤن، نصرت بھٹوکالونی،ایف بی ایریا،صدر سمیت ڈیفنس،اخترکالونی،منظورکالونی کےمختلف علاقوں میں بجلی کی فراہمی معطل ہے۔

تر جمان کےالیکٹرک کا کہنا ہے کہ ایک سو نوے فیڈرز پر بجلی تعطلی کی اطلاعا ت ہیں جبکہ نشیبی، بجلی چوری والےعلاقوں میں حفاظتی بنیاد پرعارضی بندش ہے۔

ادھر وزیر آبپاشی سندھ جام خان شورو نے حالیہ بارشوں کے پیش نظر تعطیلات میں دفاتر کھلے رکھنےکی ہدایت کرتے ہوئے حکم دیا ہے کہ افسران اور عملہ کو دی گئی چھٹیاں منسوخ کردی جائیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں