The news is by your side.

Advertisement

سندھ میں بغیر سفارش آنے والے اسسٹنٹ کمشنر کی تقرری سزا بن گئی

کراچی: صوبہ سندھ میں بغیر سفارش اور کوٹے کے، میرٹ پر آنے والے اسسٹنٹ کمشنر کی تقرری سزا بن گئی، اسسٹنٹ کمشنر کا 10 ماہ میں 10 بار تبادلہ کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ سندھ کے شہر لاڑکانہ سے تعلق رکھنے والے اسسٹنٹ کمشنر امتیاز منگی کو فٹبال بنا دیا گیا، گزشتہ 10 ماہ میں امتیاز منگی کا 10 بار تبادلہ کیا گیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کو موصول شدہ دستاویز کے مطابق امتیاز منگی کے تبادلوں کا سلسلہ 21 فروری 2020 سے شروع ہوا، اس کے بعد 11 مارچ، 20 مارچ، 9 جون، 18 جولائی، 5 اگست، 11 اگست، 20 اکتوبر اور آخری تبادلہ یکم جنوری 2021 کو کیا گیا۔

متواتر تبادلوں سے تنگ اسسٹنٹ کمشنر نے چیف سیکریٹری سندھ ممتاز علی شاہ کو ایک خط لکھا ہے اور درخواست کی ہے کہ ان کی عمر اور صحت کو مدنظر رکھتے ہوئے انہیں سکون سے اپنی ملازمت کرنے دی جائے۔

ذرائع کے مطابق امتیاز منگی کا شمار قابل افسران میں ہوتا ہے اور وہ بغیر سفارش کے صرف میرٹ کی بنیاد پر اس عہدے تک پہنچے ہیں۔ ان کا تعلق لاڑکانہ کے ایک غریب خاندان سے ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں