The news is by your side.

Advertisement

کرونا لاک ڈاؤن کے دوران 14 فیصد خواتین ملازمت سے برطرف، سروے

اسلام آباد : کرونا لاک ڈاؤن کے دوران فافن نے خواتین سے متعلق سروے میں بتایا کہ اب تک 24 فیصد خواتین ملازمت سے برطرف کی جاچکی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق دنیا بھر کو اپنی لپیٹ میں لینے والی کرونا وائرس کی مہلک ترین وبا کا پھیلاؤ روکنے کےلیے دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی لاک ڈاؤن جاری ہے۔

فافن نے کرونا وائرس لاک ڈاؤن کے دوران بے روزگار خواتین سے متعلق فافن نے سروے میں بتایا 14 فیصد خواتین کو مستقل طور پر نوکری سے نکال دیا گیا ہے جبکہ کچھ خواتین کی خدمات عارضی طور پر معطل کردی گئیں۔

فافن نے بتایا کہ بے روز گار ہونے والی خواتین میں 15 فیصد کا تعلق صوبہ سندھ سے ہے جبکہ 3 فیصد بلوچستان سے ہیں۔

فافن نے اپنے سروے میں بتایا کہ 7 فیصد کو معلوم نہیں کہ کسی سماجی تحفظ کی تنظیم میں رجسٹرڈ ہیں یا نہیں جبکہ ملازمت سے محروم ہونے والی 13 فیصد خواتین ای او بی آئی میں رجسٹرڈ ہیں۔

فافن کے مطابق ملازمت سے برطرف ایک فیصد خواتین بی آئی ایس پی میں رجسٹرڈ ہیں جبکہ 28 فیصد خواتین نے احساس پروگرامن میں امداد کےلیے درخواست دے رکھی ہیں۔

فافن نے مطالبہ کیا ہے کہ کرونا وائرس لاک ڈاؤن کے دوران حکومت ملازمین کو تحفظ فراہم کرے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں