مصر: میسحی برادری کے بس پر حملے میں ملوث 19 مشتبہ شدت پسند ہلاک
The news is by your side.

Advertisement

مصر: مسیحی برادری کی بس پر حملے میں ملوث 19 مشتبہ شدت پسند ہلاک

قائرہ: مصر میں مسیحی برادری کی بس پر حملے میں ملوث 19 مشتبہ شدت پسندوں کو مصری پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ہلاک کردیا۔

تفصیلات کے مطابق دو روز قبل مسیحی برادری کی بس پر حملہ کیا گیا تھا جس کے باعث 7 مسیحی ہلاک اور 14 زخمی ہوگئے تھے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق مصری پولیس کی جانب سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ مذکورہ حملے میں ملوث انیس عسکریت پسندوں کو ہلاک کردیا گیا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ مشتبہ دہشت گرد مصری صوبے مِنیا کے پہاڑی علاقے ميں پوليس کی کارروائی ميں مارے گئے ہیں، جہاں انہوں نے پناہ لے رکھی تھی۔

حکام کا مزید کہنا تھا کہ پولیس نے کارروائی شروع کی اس دوران عسکریت پسندوں نے اہلکاروں پر حملہ کردیا جبکہ جوابی فائرنگ کے نتیجے میں انیس مشتبہ حملہ آور مارے گئے۔

مصر میں بس پر فائرنگ، 7 افراد ہلاک، متعدد زخمی

ہلاک ہونے والے حملہ آوروں کا تعلق داعش سے ہے، بس پر حملے کی ذمہ داری بھی اسی دہشت گرد گروہ نے قبول کی تھی۔

خیال رہے کہ جمعہ دو نومبر کو قبطی مسيحی زائرین کی ايک بس مِنيا کے سينٹ سيموئل خانقاہ کی طرف روانہ تھی کہ اُس پر مسلح شدت پسندوں نے گھات لگا کر حملہ کیا اور سات افراد کو ہلاک کر دیا تھا۔

اس سے قبل مصر میں گذشتہ سال مئی میں مسیحی برادری پر حملہ کیا گیا تھا جس کے باعث 28 میسحی ہلاک ہوگئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں