The news is by your side.

Advertisement

قینچی ریلوے پھاٹک پر 2 رکشے اور3 موٹر سائیکلیں ٹرین کی زد میں آگئیں، 2 افراد جاں بحق

لاہور: قینچی ریلوے پھاٹک پر 2 رکشے اور3 موٹر سائیکلیں ٹرین کی زد میں آ گئیں، جس کے نتیجے میں ایک خاتون سمیت 2 افراد جاں بحق، جب کہ 2 افراد زخمی ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں قینچی ریلوے پھاٹک پر حادثے میں دو افراد جاں بحق اور دو شدید زخمی ہو گئے۔

ریسکیو ذرایع کا کہنا ہے کہ زخمیوں کو فوری اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جہاں انھیں طبی امداد دی جا رہی ہے۔

دوسری طرف محکمہ ریلویز نے پاک بزنس ایکسپریس ٹرین حادثے کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے، ریلوے انتظامیہ نے ٹرین ڈرائیور اور اسسٹنٹ ڈرائیور کو معطل کر دیا۔

حادثے سے متعلق ریلوے کے سی ای او نے 48 گھنٹے میں رپورٹ طلب کر لی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  پڈ عیدن : پٹریوں کی مرمت، اٹھارہ گھنٹے بعد ریلوے ٹریک کھول دیا گیا، آمد و رفت بحال

کوٹ لکھپت پھاٹک پر آج صبح ٹرین، دو رکشوں اور تین موٹر سائیکلوں کے حادثے میں زخمی ہونے والی ایک خاتون سمیت دو زخمیوں کا علاج جنرل اسپتال میں جاری ہے۔

بتایا جا رہا ہے کہ حادثہ ریلوے پھاٹک کھلا ہونے کی وجہ سے پیش آیا، تاہم ریلوے حکام کا کہنا ہے کہ حادثے کی وجوہ جاننے کے لیے تحقیقات کی جا رہی ہیں کہ پھاٹک کیوں کھلا رہ گیا۔

یاد رہے گزشتہ ہفتے صوبہ سندھ کے علاقے پڈ عیدن کے قریب مال گاڑی کی 13 بوگیاں پٹری سے اتر گئی تھیں جس کے باعث ایک کلو میٹر طویل ریلوے ٹریک اکھڑ گیا اور ٹرینوں کی آمد و رفت 18 گھنٹے تک رکی رہی۔

2 اپریل کو پنجاب کے ضلع رحیم یار خان میں مال گاڑی کو حادثہ پیش آیا تھا جس کے باعث ملک بھر میں ریلوے کا نظام درہم برہم ہو گیا، حادثے پر وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے قوم سے معافی بھی مانگی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں