The news is by your side.

Advertisement

عالمی سطح پر 2019 پاکستان کی فتوحات کا سال

کراچی: کھیلوں کے عالمی سطح پر ہونے والے مختلف ایونٹس میں پاکستان کے باصلاحیت کھلاڑیوں نے کمال کردکھایا اور مختلف عالمی ٹائٹل اپنے نام کیے۔

تفصیلات کے مطابق ایک جانب جہاں عالمی سطح پر کھیلوں سے متعلق پاکستان کی پزیرائی تو دوسری طرف ملک میں بھی کرکٹ کے عالمی دروازے کھلے اور دس سال بعد ٹیسٹ کا میدان بھی یہیں سجا۔

ساؤتھ ایشین گیمز میں پاکستانی پہلوان انعام بٹ نے گولڈ میڈل اپنے نام کیا، سید عماد علی نے جونیئر اسکریبل ورلڈ کپ جیتنا، محمد آصف اسنوکر چیمپیئن بنے، اسی طرح یہ سال ملک و قوم کے لیے باعث فخر رہا۔

پاکستان کا نام روشن کرنے والے اسنوکر چیمپئن محمد آصف کیلئے ایک اور انعام

2019 میں پاکستان کا سبز ہلالی پرچم عالمی سطح پر سربلند رہا، کئی بین الاقوامی مقابلوں میں ٹرافی اور طلائی سے لے کر کانسی کے تمغہ پاکستانی کھلاڑیوں نے جیت کر دکھایا، محمد آصف نے دوسری مرتبہ پاکستان کو عالمی چیمپیئن بنانے کا اعزاز حاصل کیا۔

ساؤتھ ایشین گیمز، انعام بٹ نے فائنل کا میدان مار لیا

انعام بٹ ہر بین الاقوامی ایونٹ میں ملک کی شان بنے، ساوتھ ایشین گیمز کراٹے ایونٹ میں پاکستان کے کراٹے کاز کا راج رہا، ایشین انڈر 21 بیڈمنٹن چیمپیئن شپ میں پاکستان کے راجہ حیدر اور محمد عدنان نے بھارت کو ہرا کر طلائی تمغہ حاصل کیا۔

انگریزوں کی سرزمین پر پاکستان کے سید عماد علی کم عمر جونئیر ورلڈ اسکریبل چیمپیئن بنے، کراچی کے تن ساز بھائیوں دانش علی اور رضا باقری دبئی اور ملائیشیا کے مسل مینیا چیمپیئن شپ میں سب پر بھاری پڑے، سہولیات کی کمی کھلاڑیوں کی راہ میں رکاوٹ ضرور بنی لیکن کچھ کردکھانے کی جستجو نےانھیں ملک کی پہچان بنا دیا ہے۔

دوسری جانب ملک میں عالمی کرکٹ بحال ہوئی، سری لنکن ٹیم نے پاکستان کا دورہ کیا، بعد ازاں بنگلادیش اور ساؤتھ افریقہ کی ٹیمیں بھی پاکستان آنے کے لیے تیار ہوگئی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں