The news is by your side.

Advertisement

38 لاکھ سے زائد شہری یوکرین چھوڑ کر بھاگ گئے

کیف: اقوام متحدہ کے پناہ گزینوں کے ادارے (یو این ایچ سی آر) کا کہنا ہے کہ روس کے حملے کے بعد سے 3.8 ملین سے زیادہ لوگ یوکرین سے نقل مکانی کر چکے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق یو این ایجنسی نے کہا ہے کہ یوکرین چھوڑنے والے 38 لاکھ 66 ہزار 224 افراد میں سے تقریباً 90 فی صد خواتین اور بچے ہیں۔

یو این ادارے نے مزید تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ زیادہ تر یوکرینی شہری پولینڈ بھاگ گئے ہیں، 2.2 ملین سے زیادہ لوگ یوکرین کے مغربی پڑوس میں داخل ہوئے ہیں، 5 لاکھ سے زیادہ رومانیہ میں داخل ہو چکے ہیں، جب کہ مالڈووا اور ہنگری میں 3 لاکھ سے زیادہ مہاجرین داخل ہوئے ہیں۔

UNHCR نے کہا ہے کہ انھوں نے ہمسایہ ممالک کے اُن شہریوں کو شمار نہیں کیا، جو یوکرین چھوڑ کر وطن واپس گئے ہیں۔

یوکرین نے شہری انخلا روک دیا

یوکرین کا کہنا ہے کہ اس نے عارضی طور پر روسی ‘اشتعال انگیزی’ کے خطرے کے پیش نظر انسانی ہمدردی کی راہداریوں کے ذریعے شہریوں کے انخلا کا عمل روک دیا ہے۔

ماریوپول کے میئر کا کہنا ہے کہ جنوب مشرقی بندرگاہی شہر ایک انسانی تباہی کے دہانے پر ہے، یہ شہر روس کے قبضے میں آ چکا ہے، دوسری طرف دارالحکومت کیف کا کہنا ہے کہ وہ غیر جانب دار حیثیت اختیار کرنے پر ماسکو کے ساتھ بات چیت کے لیے تیار ہے۔

کیف ماسکو کے ساتھ جنگ کے خاتمے کے لیے مذاکرات کے نئے دور کی تیاری بھی کر رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں