The news is by your side.

Advertisement

’افغانستان میں امریکی فوجی مشن ختم ہوچکا، وعدے پورے نہیں ہوئے‘

واشنگٹن: امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغانستان زلمے خلیل زاد کا کہنا ہے کہ افغانستان میں امریکی فوج کی مصروفیت ختم ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغانستان زلمے خلیل زاد نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ افغانستان میں اب ہماری ذمہ داری پوری ہوگئی، امن کے لیے سب کے ساتھ مل کر کوشش کریں گے۔

زلمے خلیل زاد نے لکھا کہ ’ امن معاہدے سے متعلق سفارت کاری جاری رکھنے کے لیے قطر جارہا ہوں۔‘


انہوں نے کہا کہ امریکی صدر جوبائیڈن حال ہی میں کہہ چکے ہیں مذاکرات ہی واحد حل ہیں، فریقین کو جنگ کے خاتمے کی راہ میں مدد فراہم کریں گے۔

زلمے خلیل زاد نے کہا کہ امریکی فوجی مشن ختم ہوچکا، وعدے پورے نہیں ہوئے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز امریکی صدر جوبائیڈن کا کہنا تھا کہ افغانستان میں امریکا کے اہداف پورے ہو گئے، اسامہ بن لادن کی ہلاکت ساتھ ہی مشن مکمل ہوگیا تھا، افغانستان دنیا میں اب دہشت گردی کا مرکز نہیں رہا۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکا کی ایک اور نسل کو افغانستان نہیں بھیجوں گا، 11 ستمبر تک تمام امریکی فوجی واپس آ جائیں گے، تاہم امریکا امن عمل کی حمایت اور افغان فورسز کی مدد جاری رکھے گا۔

جو بائیڈن کا کہنا تھا کہ طالبان کا مکمل افغانستان پر کنٹرول مشکل ہے، ہمارا کام ختم ہو گیا، اب افغان عوام کا حق ہے وہ جسے منتخب کریں، اُن پر اپنی مرضی کی حکومت مسلط نہیں کر سکتے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں