ایبٹ آباد: شدید برفباری بھی پولیو ورکرز کا حوصلہ پست نہ کرسکی، مہم جاری رکھی
The news is by your side.

Advertisement

ایبٹ آباد: شدید برفباری بھی پولیو ورکرز کا حوصلہ پست نہ کرسکی

ایبٹ آباد: موسم کی سختی، شدید برفباری اور خون جما دینے والی سردی بھی پولیو ورکرز کا حوصلہ کم نہ کرسکی، پولیو کے خاتمے کے لیے ورکرز اپنا فریضہ ادا کرتے رہے۔

تفصیلات کے مطابق پولیو کے خاتمے کے لیے پولیو ورکرز شدید برفباری میں بھی اپنی ذمہ داریاں ادا کررہے ہیں، ایبٹ آباد میں برفباری کے دوران تیسرے روز بھی پولیو قطرے پلانے میں مصروف رہے۔

گلیات اور ٹھنڈیانی کے دشوار اور برف پوش علاقوں میں صحت کے محافظوں نے عزم، ہمت اورحوصلے کی مثال قائم کردی۔

شدید برفباری اور دشوار گزار راستوں سے ہوتے ہوئے پولیو ورکز گھروں تک پہنچے اور بچوں کو قطرے پلائے، ڈی ایچ او ایبٹ آباد کہتے ہیں کہ برفانی علاقوں میں ایک لاکھ سے زائد بچوں کو انسداد پولیو کی ویکسین پلائی جارہی ہیں۔

محکمہ صحت کا کہنا تھا کہ ان کا عملہ اپنا فرض نبھا رہا ہے، عوام بھی پانچ سال سے کم عمر بچوں کو ویکسین پلا کر پولیو کے ملک سے خاتمے میں حصہ ڈالیں۔

پولیوورکر عرفان کے جذبے سے ہم پاکستان کوپولیوفری کرنے میں کامیاب ہوں گے، وزیراعظم

واضح رہے کہ گذشتہ دنوں پاکستانی پولیو ورکرز کی سردی کے سخت موسم میں سوات کے برف پوش پہاڑوں پر چلتے ہوئے پولیو ویکسین پلانے کے لیے جانے کی تصاویر اور ویڈیوز سوشل میڈیا پر سامنے آئی تھی ، جن میں وہ شدید سرد موسم اور برف باری کے دوران بھی پولیو پلانے کے لیے اپنے سفر پر رواں دواں تھے، دشوار گزار برفیلے راستے بھی ان کی ہمت نہ توڑ سکے تھے۔

بعد ازاں وزیراعظم عمران خان سمیت اقوام متحدہ کا ادارہ برائے صحت نے بھی پولیو ورکرز کی کاوشوں کا خوب سراہا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں