site
stats
سندھ

عدالت کا ٹھوس ثبوت کے بغیرعبداللہ کو باپ کے حوالے کرنے سے انکار

کراچی : ننھےعبداللہ کی حوالگی کیس کی سماعت پندرہ جون تک ملتوی کردی گئی۔ ایدھی سینٹر نے بھی بغیر ثبوت کے بچہ دینے سے انکار کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق ننھے عبداللہ کے والد چوہدری اقبال کی جانب سے بچے کی حوالگی کے لئے دائر درخواست کی سماعت فیملی کورٹ میں ہوئی۔

عدالت نے عبداللہ کو لینے آنے والے چودھری اقبا ل کو حکم دیاکہ پہلے وہ بچے سے اپنا رشتہ ثابت کریں پھر حوالگی کا حکم ملےگا۔

عدالت نے ہدایت کی کہ ابھی عبداللہ ایدھی سینٹر میں ہی رہے گا۔ اس موقع پر چوہدری اقبال کے وکیل کی جانب سے عبداللہ کا برتھ سرٹیفکیٹ پیش کیا گیا اور کہا گیا کہ والدہ حلیمہ کے انتقال کے بعد چوہدری اقبال ہی بچے کے حقیقی وارث ہیں لہذا عبداللہ کو والد کے سپرد کیا جائے۔ اقبال چوہدری کے وکیل کاکہنا تھا کہ تمام دستاویزات موجود ہیں۔

دریں اثناء عبداللہ کی والدہ حلیمہ قتل کیس کی سماعت میں پولیس ریمانڈ ختم ہونے پر ملزم رضوان کی اہلیہ سونیا کو پیش کیا گیا۔

عدالت نے ملزمہ سونیا کی درخواست ضمانت مسترد کرتے ہوئے چودہ روزہ عدالتی تحویل میں جیل بھیجنے کا حکم دے دیا اس سے پہلے عبد اللہ کی ماں حلیمہ کے قتل کا ملزم رضوان عدالت میں اعترافی بیان سے مکر گیا تھا۔

عدالت نے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد فریقین کو آئندہ سماعت پر بچے کی حوالگی کے حوالے سے ٹھوس شواہد پیش کرنے کے احکامات دیتے ہوئے کیس کی سماعت 15 جون تک ملتوی کردی۔

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top