The news is by your side.

Advertisement

قانون سازی جدید خطوط پراستوار، ابوظبی بازی لے گیا

ابوظبی: ابوظبی نے قانون سازی میں تاریخی اصلاحات کرتے ہوئے گلوبل لیڈر شپ حاصل کرلی ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق ابوظبی میں قانون سازی کو جدید خطوط پر استوار کردیا ہے، جس کے باعث ججز اب آن لائن فیصلہ سازی کرسکیں گے، یہ اعلان ابوظبی جوڈیشل ڈیپارنمنٹ (اے ڈی جے ڈی) کی جانب سے کیا گیا، جس میں بتایا گیا کہ ابوظبی میں قانون سازی کے لئے اپنی نوعیت کی پہلی ون اسٹاپ شاپ فار لیجسٹلیشن اقدام اٹھایا گیا ہے۔

ابتدائی طور پر العین اور دھفرا میں ججز کو تنازعات سے متعلق کیسز سننے کے لئے کسی زمینی دفتر کی ضرورت نہیں ہوگی، وہ اب آن لائن بھی مقدمات کی سماعت کرسکیں گے۔

اسی فیصلے کے تحت ججز ویڈیو کانفرنس کی مدد سے ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے فیصلہ سازی کرسکیں گے، یہ اقدام نائب وزیر اعظم اور صدارتی امور کے وزیر اور ابوظبی جوڈیشل ڈیپارنمنٹ کے چیئرمین شیخ منصور بن زید النیہان کی ہدایات کے بعد اٹھایا گیا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق تاریخی اقدام کا مقصد ابوظبی کی اعلیٰ ترجیحات میں جوڈیشل اور قانونی ضروریات پوری کرنا، تیزی سے رونما ہونے والی ترقی اور اہداف کا حصول اور عالمی پریکٹس کے کا حصول ہے۔

اے ڈی جے ڈی کے انڈر سیکریٹری یوسف سعید الابری کا کہنا ہے کہ اس اقدام سے ابوظبی کیپٹل کورٹ نے الیکٹرانک قانون سازی میں گلوبل لیڈر شپ حاصل کرلی ہے، انہوں نے بتایا کہ ون اسٹاپ شاپ انیشیٹو کمیونٹی کو فائدہ پہنچائے گی اور اس سے عوام کا اعتماد مزید بڑھ جائے گا۔

واضح رہے کہ یہ اقدام متعارف کرانے کی بڑی وجہ کرونا وائرس کا پھیلاؤ بھی ہے، کیونکہ عالمی وبا پھیلنے کے بعد ابوظبی کی عدالتوں میں زیادہ تر سماعتوں کو دو دراز سے سنا گیا، کئی مقدمات میں بغیر قانونی چارہ جوئی کے ملزمان کو ریلیف ملا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں