کراچی: موٹرسائیکل چوری کرنے والے گروہوں کے گرد گھیرا تنگ -
The news is by your side.

Advertisement

کراچی: موٹرسائیکل چوری کرنے والے گروہوں کے گرد گھیرا تنگ

انتہائی مطلوب افراد کی فہرست جاری، حفاظتی تدابیر بھی بتادیں

کراچی: اینٹی کار لفٹنگ سیل نے کراچی میں موٹر سائیکل چھیننے اور چوری کرنے میں ملوث گروہوں کے خلاف گھیرا تنگ کردیا ہے ، 100 انتہائی مطلوب ملزمان کی تصاویر جاری کردی گئی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق اے سی ایل سی ان دنوں موٹر سائیکل چھیننے اور چرانے والے منظم نیٹ ورک کی سرکوبی کے لیے سرگرم ہے ، گزشتہ چند ماہ میں اس سلسلے میں سینکڑوں کاروائیاں عمل میں لائی گئیں ہیں جن میں 400 کاریں اور ایک ہزار سے زائد موٹر سائیکلیں بازیاب کرکے مالکان کے حوالے کی گئی ہیں۔

ایس ایس پی ( سی پی ایل سی ) اسد رضا کا کہنا ہے کہ رواں سال جنوری سے آج تک مختلف کارروائیوں میں 300 سے زائد ملزمان کو حراست میں لیا گیا ہے جبکہ اس مہم کو کامیابی سے ہمکنار کرنے کے لیے 100 انتہائی مطلوب افراد کی فہرست بھی جاری کردی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ گزشتہ چند ماہ میں اے سی ایل سی اور ملزمان کے گروہوں کے درمیان 10 مقابلے بھی ہوئے اور پولیس نے انتہائی کامیابی سے موٹر سائیکل لفٹر ز کے 51 گروپس کو کامیابی کے ساتھ ختم کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ ملزم سہولت کاروں کی مدد سے کارروائی کرتے تھے ، زیادہ تر کا تعلق کراچی اور بلوچستان سے ہے۔ گرفتار ہونے والے ملزمان سے تفتیش کرکے سہولت کاروں کو بھی اب حراست میں لیا جارہا ہے۔

ایس ایس پی اسد رضا کے مطابق اے سی ایل سی اب سہولت کاروں کی سرکوبی میں مشغول ہے جس کے لیےکراچی کے تمام تھانوں ، اداروں اور پبلک مقامات پر موسٹ وانٹڈ افراد کی تصاویر آویزاں کردیں گئی ہیں۔ یہ افراد موٹر لفٹنگ میں پولیس کو مطلوب ہیں۔

دوسری جانب اے سی ایل سی کی جانب سے ایک لسٹ اور شائع کی گئی ہے جس میں شہریوں کو اپنی موٹرسائیکل کی حفاظت کے لیے ممکنہ احتیاطی تدابیر سے آگاہ کیا گیا ہے۔ لسٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ موٹر سائیکل یا گاڑی چوری ہونے یا چھن جانے کی صورت میں کون سے اقدامات ہیں جو کہ شہریوں کو ان کی املاک واپس دلانے میں مدد گار ثابت ہوسکتے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں