The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹرادیب رضوی کے نام طب کا اعلیٰ ترین اعزاز

پاکستان کے مایہ ناز سرجن ڈاکٹرادیب الحسن رضوی کو امریکن کالج آف سرجنز نے ان کی طبی مہارت اور انسانیت کے لیے ان کی خدمات کے اعتراف میں اعلیٰ ترین اعزاز سے نواز دیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ انسٹی ٹیوٹ آف یورولوجی اینڈ ٹرانسپلانٹیشن کے بانی اور روحِ رواں ڈاکٹر ادیب رضوی کو امریکن کالج آف سرجنز نے اعزازی فیلو شپ سے نوازا ہے۔

یاد رہے کہ اعزازی فیلو شپ کسی بھی شخص کی قابلیت کے اعتراف میں دیا جانے والااعلیٰ ترین ایوارڈ ہے جو کسی ادارے کی جانب سے دیا جاسکتا ہے۔

امریکن کالج آف سرجنز کا قیام 1912 میں شکاگو میں عمل میں لایا گیا تھا اور دنیا بھر سے تعلق رکھنے والے ماہر ترین ڈاکٹرز جنہوں نے سرجری کے بیک وقت کئی اسپیشلائز کورسز کر رکھے ہوں انہیں اس ادارے کا ممبر منتخب کیا جاتا ہے ۔

اس نامور ادارے کی اعزازی فیلوشپ کا مقصد ڈاکٹر ادیب رضوی کی دنیا بھر کے ماہرین طب میں جداگانہ حیثیت کا اعتراف اور دکھی انسانیت کے لیے ان کی خدمات کو سراہنا ہے۔

یاد رہے کہ ایس آئی یو ٹی کا قیام 1970 میں کراچی کے سول اسپتال میں عمل میں لایا گیا تھا اور یہ پاکستان میں گردوں کے امراض کے علاج کا سب سے بڑا مرکز ہے جہاں بلا مبالغہ لاکھوں مریضوں کوعلاج معالجے کی سہولت مفت مہیا کی جاتی ہے۔

ایس آئی یو ٹی میں ماہر ڈاکٹروں کی ٹیم نے ڈاکٹر ادیب رضوی کی سربراہی میں 2003 میں جگر کی کامیاب پیوند کاری کی تھی اور اب ہر ہفتے 10 سے بارہ ٹرانسپلانٹ کیے جاتے ہیں،

واضح رہے کہ آج کے جدید ترین دور میں بھی جگر کی پیوند کاری سرجری کی دنیا کا مشکل ترین عمل شمار ہوتا ہے اور دنیا کے محض چند ممالک ہی اس آپریشن کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں