The news is by your side.

Advertisement

انتخابات میں شکست، ایم کیو ایم (حقیقی) کے سربراہ قیادت سے دستبردار

کراچی: مہاجر قومی موومنٹ (ایم کیو ایم حقیقی) کے چیئرمین آفاق احمد نے عام انتخابات میں شکست کا اعتراف کرتے ہوئے پارٹی کی سربراہی چھوڑنے کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق مہاجر قومی موومنٹ کے چیئرمین قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 240 سے انتخابات لڑ رہے تھے مگر انہیں کامیابی حاصل نہ ہوئی اور ایم کیو ایم پاکستان کے ڈپٹی اقبال نے فتح اپنے نام کی۔ فاتح امیدوار نے 240 سے 61ہزار 165 ووٹ حاصل کیے جبکہ آفاق احمد کو 14ہزار 3سو 76 ووٹ مل سکے تھے۔

انتخابات میں شکست کے بعد حقیقی کے چیئرمین نے اپنی رہائش گاہ پر پریس کانفرنس طلب کی جس کے دوران انہوں نے پارٹی کی سربراہی چھوڑنے کا اعلان کیا۔

آفاق احمد کا کہنا تھا کہ ’الیکشن میں ناکامی کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے اعتراف کرتا ہوں کہ پارٹی کو اب نئی قیادت کی ضرورت ہے لہذا نئے لوگ آکر جماعت کو سنبھالیں اور مجھے اجازت دیں‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ سربراہی چھوڑنے کا فیصلہ حتمی ہے اگر کارکنان اصرار بھی کریں گے تو اُن کی بات سُن کر فیصلہ تبدیل نہیں کروں گا، پارٹی کے کچھ لوگ مجھے ڈاکٹر فاروق ستار کی طرح بنانا چاہتے ہیں۔

آفاق احمد نے اعلان کیا کہ کارکن کی حیثیت سے آکر سانس تک مہاجروں اور اُن کی نمائندہ جماعت کے لیے جدوجہد کرتا رہوں گا، اب کارکنان پارٹی قیادت کا اور ذمہ داران کا فیصلہ کرتے ہوئے اپنی جماعت کو مضبوط بنائیں۔

حقیقی کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ انتخابات میں غلطی ہوئی اور ہم اپنے خلاف ہونے والی سازشوں کو روک نہیں سکے، کارکن کے ساتھ قیادت بھی غلطی کرسکتی ہے لہذا جماعت میں جمہوری روایت کو فروغ دینے کے لیے صدارت چھوڑ رہا ہوں۔

عام انتخابات میں صوبائی اور قومی اسمبلی کی نشستوں پر تحریک انصاف کی کامیابی پر تبصرہ کرتے ہوئے آفاق احمد کا مزید کہنا تھا کہ ’مین مہاجر سیاست کرنے والوں کو خبردار کرتا رہا مگر کسی نے بات نہ سنی اور آج یہ شہر ہم سب کے ہاتھوں سے نکل گیا‘۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں