23.3 C
Ashburn
ہفتہ, مئی 25, 2024
اشتہار

افغان باشندوں کی سزا پوری ہونے پر ڈی پورٹ کرنے کا سلسلہ شروع

اشتہار

حیرت انگیز

کراچی : پاکستان میں غیرقانونی طور پر مقیم افغان باشندوں کو ان کی قید کی سزا پوری ہونے کے بعد ڈی پورٹ کرنے کا سلسلہ شروع کردیا گیا ہے۔

اس حوالے سے جاری دستاویزات کے مطابق سندھ کی مختلف جیلوں سے سزا پوری ہونے پر530 افغان باشندے رہا کردیے گئے جنہیں واپس افغانستان بھیجا جائے گا۔

کراچی اور حیدرآباد جیل سے کل317افغان قیدی، حیدرآباد جیل سے169، کراچی جیل سے148افغان مردوں کورہا کیا گیا جبکہ کراچی اورحیدرآباد کی بچہ جیل سے41بچوں کو رہا گیا ہے۔

- Advertisement -

اس کے علاوہ کراچی ویمن جیل سے56،حیدرآباد ویمن جیل سے32افغان خواتین قیدیوں کو رہا کیا گیا، کراچی اور حیدرآباد کی ویمن جیلوں سے84بچوں کو ان کی ماؤں کے ساتھ رہا کیا گیا۔

دستاویز کے مطابق 800افغان قیدی ابھی سندھ کی مختلف جیلوں میں قید ہیں، رہا ہونے والے تمام قیدی اپنی سزائیں پوری کرچکے ہیں، تمام ملزمان کو مختلف عدالتوں سے2،2ماہ قید کی سزائیں ہوئی تھیں۔

محکمہ داخلہ سندھ کے مطابق رہا ہونے والوں میں افغان کرکٹر فضل الحق فاروقی کے3بھانجے اور ایک بہن بھی شامل ہے، محکمہ داخلہ نے پولیس کو افغان قیدیوں کو تحویل میں لے کر چمن بارڈر لے جانے کا حکم جاری کیا اور ہدایت کی کہ افغان قونصل خانے کو بھی ڈی پورٹ کرنے سے متعلق آگاہ کیا جائے۔

علاوہ ازیں افغان وزارت خارجہ نے پاکستان کے شہر کراچی میں قید 524 افغان شہریوں کی رہائی کی تصدیق کی ہے۔

وزارت خارجہ نے ایک پریس ریلیز میں کہا ہے کہ آج اسلام آباد میں افغان سفارت خانے اور کراچی میں افغان جنرل قونصلیٹ کی کوششوں سے کراچی کی جیلوں میں قید 524 شہری رہا ہوچکے ہیں۔ جن میں 54 خواتین اور 97 بچے بھی شامل ہیں۔

خبر میں کہا گیا ہے کہ قیدیوں کے ٹرانسپورٹ، راستے کے کھانے پینے کے اخراجات اور کپڑوں کے تمام اخراجات افغان وزارت خارجہ کی ہدایت پر سفارت خانہ ادا کرے گا۔

Comments

اہم ترین

فیض اللہ خان
فیض اللہ خان
فیض اللہ خان اے آروائی نیوز سے وابستہ سینئر صحافی اور وارز ون ‘ ایکسپرٹ ہیں۔ پاکستان اور افغانستان کے درمیان قدرتی حدِ فاصل کا کام دینے والے قبائلی علاقے میں جاری جنگ اوراس سے ملحقہ امور پر خصوصی گرفت رکھتے ہیں

مزید خبریں