The news is by your side.

Advertisement

ڈپٹی اسپیکر کی رولنگ سے متعلق فیصلہ: عمران خان کے بعد اسد قیصر نے بھی نظرثانی اپیل دائر کردی

اسلام آباد : سابق وزیراعظم کے بعد سابق اسپیکر اسد قیصر نے بھی ڈپٹی اسپیکر کی رولنگ سے متعلق فیصلے پر نظرثانی اپیل دائر کردی۔

تفصیلات کے مطابق سابق اسپیکر اسد قیصر نے بھی ڈپٹی اسپیکر کی رولنگ سے متعلق فیصلے پر سپریم کورٹ میں نظرثانی اپیل دائر کردی۔۔

جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ قوم کی نظریں عدالت پر لگی ہیں، امید ہے بیرونی مراسلے پر جوڈیشل کمیشن قائم کیا جائے گا۔

اسد قیصر نے کہا کہ سپریم کورٹ جلد الیکشن کیلئے بھی کردار ادا کرے گی اور مراسلے پر جوڈیشل کمیشن بناجائے۔

سابق اسپیکر کا کہنا تھا کہ عدالت کا پارلیمان کی اندرونی معاملات میں مداخلت دستور پاکستان کے تحت کسی حد تک اجازت ہے یا نہیں ؟ کیا آرٹیکل95 بالا تر ہے آرٹیکل 65سے؟ اُس وقت وزیر قانون نے جو پوائنٹ آف آرڈر دیا تھا اگر اسے مسترد کیا جاتا،تو کیا سپریم کورٹ اس پر بھی مداخلت کرتی؟اگر نہیں تو منظور ہونے پر کیوں کیا؟

بعد ازاں اسد فیصر نے سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں نے وہ مراسلہ خود پڑھا تھا، جب مراسلہ پڑھا تو فیصلہ کیا اس صورتحال میں کسٹوڈین نہیں رہ سکتا، بیرونی سازش کے مراسلے کی بنیاد پر اسمبلی سے استعفیٰ دیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں