The news is by your side.

سندھ میں 31 لاکھ ایکڑ زمین پر موجود فصلیں تباہ ہوگئیں: وزیر اعلیٰ

کراچی: وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ سندھ میں 31 لاکھ 72 ہزار 726 ایکڑ پر کھڑی فصلیں تباہ ہوگئیں، صرف گھروں کی تعمیر کے لیے 450 ارب روپے درکار ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی انٹرنیشنل ڈونرز سے ایئرپورٹ پر ملاقات ہوئی، وزیر اعلیٰ ور چیف سیکریٹری سہیل راجپوت نے ڈونرز کو سندھ کی صورتحال پر بریفنگ دی۔

وزیر اعلیٰ کا کہنا تھا کہ جولائی میں عام بارشوں کے مقابلے میں 308 فیصد زیادہ بارشیں ہوئیں، اگست میں 784 فیصد زیادہ بارشیں ہوئیں۔

انہوں نے کہا کہ سندھ کے 24 اضلاع، 102 تعلقہ اور 5 ہزار 727 دیہات شدید متاثر ہوئے ہوئے، 405 اموات اور 1 ہزار 74 لوگ زخمی ہوئے۔ 15 لاکھ گھر گر گئے ہیں جس کو تعمیر کے لیے 450 ارب روپے درکار ہیں۔

وزیر اعلیٰ کا کہنا تھا کہ سندھ میں 31 لاکھ 72 ہزار 726 ایکڑ پر فصلیں تباہ ہوگئیں، بارشوں میں 2281.5 کلو میٹر کے 570 روڈ تباہ ہوگئے۔ ایک کلومیٹر کی تعمیر پر 10 ملین روپے کی لاگت ہوتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ نقصانات کا تخمینہ 860 بلین روپے بنتا ہے، سندھ حکومت کو اموات اور زخمیوں کا معاوضہ دینا ہے۔ گرے ہوئے گھر اور مرنے والے مویشیوں کا بھی معاوضہ دینا ہوگا۔

وزیر اعلیٰ کا مزید کہنا تھا کہ زرعی قرضہ معاف یا ایک سال کے لیے مؤخر اور اقساط میں کرنا ہوگا، زرعی مشینری، کھاد، کیڑے مار ادویات اور بیج پر سبسڈی دینا ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں