The news is by your side.

مسجد اقصیٰ کے تقدس کی پامالی فلسطین میں حالات خراب کرنے کی کوشش ہے، پاکستان کی اسرائیلی وزیر کے دورے کی شدید مذمت

اسلام آباد: پاکستان نے مسجد الاقصیٰ کے تقدس کی پامالی فلسطین میں حالات خراب کرنے کی کوشش قرار دے دی، پاکستان کی جانب سے اسرائیلی وزیر کے دورے کی شدید مذمت کی گئی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے انتہا پسند اسرائیلی وزیر بِن گویر کے مسجد اقصیٰ کے دورے پر رد عمل میں کہا ہے کہ پاکستان مسجد اقصیٰ کے احاطے کے اس اشتعال انگیز دورے کی شدید مذمت کرتا ہے۔

ترجمان نے کہا مسجد الاقصیٰ ایک مقدس مقام ہے، دنیا بھر کے مسلمان مسجد الاقصی سے عقیدت رکھتے ہیں، مسجد الاقصی کے تقدس کی پامالی مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کرتی ہے۔

ترجمان نے کہا مسجد الاقصی کے تقدس کی پامالی فلسطین میں حالات خراب کرنے کی کوشش ہے، اسرائیل فلسطین میں غیر قانونی اقدمات بند کرے، اور مقبوضہ فلسطین میں مسلمانوں کے مذہبی مقامات کے تقدس کا احترام کیا جائے۔

دفتر خارجہ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ پاکستان فلسطین کی جدوجہد آزادی کو سپورٹ کرتا ہے، اور اقوام متحدہ، او آئی سی قراردادوں، اور 1966 کی سرحدوں کے مطابق فلسطین کی حمایت کرتا ہے۔

اسرائیل کے انتہا پسند وزیر مسجدِ اقصی میں داخل ، عالمی برادری سخت برہم

ترجمان نے کہا پاکستان 1967 سے پہلے کی سرحدوں کے مطابق خود مختار فلسطینی ریاست کا مطالبہ دہراتا ہے، پاکستان ایسی آزاد فلسطینی ریاست چاہتا ہے جس کا دارالحکومت القدس الشریف ہو۔

وزیر خارجہ پاکستان بلاول بھٹو نے بھی ایک ٹوئٹ میں لکھا: ’’پاکستان اسرائیلی وزیر کے مسجد اقصیٰ کے احاطے میں اشتعال انگیز دورے کی مذمت کرتا ہے۔‘‘

Comments

یہ بھی پڑھیں