The news is by your side.

Advertisement

پروفیسر علّامہ عبد العزیز میمن بحیثیت عربی مصنّف و محقّق

پروفیسر علّامہ عبد العزیز میمن عربی زبان و ادب کے نام وَر عالم اور استاد تھے۔ ان کی عربی دانی کو اہلِ عرب بھی تسلیم کرتے تھے۔

وہ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی، جامعہ پنجاب اور کراچی یونیورسٹی کے شعبۂ عربی کے صدر رہے۔ موصوف عربی لغت کی باریکیوں سے گہری واقفیت رکھتے تھے اور اس میں انھیں استاد مانا جاتا ہے۔

علّامہ عبد العزیز میمن 23 اکتوبر 1888ء کو راج کوٹ میں پیدا ہوئے تھے۔ انھوں نے راج کوٹ اور جونا گڑھ سے ابتدائی تعلیم حاصل کی اور بعد میں دہلی چلے گئے جہاں اپنے وقت کے جیّد علما اور ممتاز دینی شخصیات کے علاوہ ڈپٹی نذیر احمد سے اکتسابِ علم کا موقع ملا۔ 1913ء میں جامعہ پنجاب سے مولوی فاضل کا امتحان دیا اور پوری یونیورسٹی میں اوّل آئے۔ وہ ایڈورڈ کالج پشاور، اورینٹل کالج لاہور اور علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے شعبہ عربی سے بطور استاد وابستہ رہے۔

قیامِ پاکستان کے بعد علّامہ صاحب کی کوششوں سے کراچی یونیورسٹی میں شعبۂ عربی قائم ہوا۔ وہ کئی کتابوں کے مصنّف تھے جو ان کی تحقیق اور زبان و ادب سے گہرے شغف اور زورِ قلم کا نتیجہ ہیں۔

حکومتِ پاکستان نے علّامہ عبد العزیز میمن کی خدمات کے اعتراف میں انھیں صدارتی تمغا برائے حسنِ کارکردگی عطا کیا تھا۔ انھوں نے 27 اکتوبر، 1978ء کو کراچی میں وفات پائی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں